Live Updates

کورونا ویکسین نہ لگوانے والوں کی موبائل سم بلاک کرنے کا حتمی فیصلہ

پنجاب میں 12 جون سے ویکسینیشن لازمی قرار دینے کی تیاریاں، ویکسین لگوانے سے انکار کرنے والوں پر مزید پابندیاں بھی عائد کی جائیں گی

muhammad ali محمد علی جمعرات جون 20:24

کورونا ویکسین نہ لگوانے والوں کی موبائل سم بلاک کرنے کا حتمی فیصلہ
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 جون2021ء) کورونا ویکسین نہ لگوانے والوں کی موبائل سم بلاک کرنے کا حتمی فیصلہ، پنجاب میں 12 جون سے ویکسینیشن لازمی قرار دینے کی تیاریاں، ویکسین لگوانے سے انکار کرنے والوں پر مزید پابندیاں بھی عائد کی جائیں گی۔ تفصیلات کے مطابق حکومت پنجاب نے کوروناکے تدارک اور ویکسینیشن کا عمل تیزکرنے کیلئے اہم فیصلے کرلئے ہیں۔

ویکسینیشن نہ کروانے والے افراد کا موبائل سم کارڈ بلاک کرنے کا حتمی فیصلہ کرلیا گیا ہے۔ جبکہ 12جون سے پنجاب بھر میں 18سال سے زائد عمر کے افراد کی واک اِن ویکسینیشن کا فیصلہ کرلیا گیا۔ پنجاب کے اہم مزارات کے باہرموبائل ویکسینیشن کیمپ قائم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔20 فیصد آبادی کی ویکسینیشن کروانے والے تمام اضلاع میں مکمل کاروبار کھول دئیے جائینگے۔

(جاری ہے)

محکمہ پرائمری اینڈسیکنڈری ہیلتھ کئیر عوام کی سہولت کی خاطرنوٹیفیکیشن بھی جاری کرے گا۔ تمام اہم فیصلے صوبائی وزیر صحت ڈاکٹریاسمین راشد کی زیرصدارت سول سیکرٹریٹ کے دربارہال میں کوروناکی صورتحال کا جائزہ لینے کیلئے اعلی سطح کے اجلاس کے دوران کئے گئے۔اجلاس میں چیف سیکرٹری پنجاب،ایڈیشنل چیف سیکرٹری،ڈی جی پی آر،محکمہ صحت کے سیکرٹریز اور اعلی سول وعسکری قیادت نے شرکت کی۔

اجلاس کے دوران کوروناکے پھیلاؤ کوروکنے،ویکیسنیشن سنٹرزکی تعدادکوبڑھانے،سرکاری ہسپتالوں میں طبی سہولیات میں اضافہ ودیگراقدامات کا جائزہ لیاگیا۔ سیکرٹریز صحت سارہ اسلم اور برسٹرنبیل اعوان نے وزیر صحت اور چیف سیکرٹری کوصوبہ بھرمیں کوروناکے تدارک کیلئے اٹھائے گئے اقدامات کی تفصیلات سے آگاہ کیا۔اجلاس کے دوران صوبہ بھرمیں کوروناکے کیسزاور اموات میں واضح کمی پر سیکرٹریز صحت کو سراہاگیا۔

صوبائی وزیر صحت ڈاکٹریاسمین راشدنے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ صوبہ بھرمیں کوروناکے تشویشناک مریضوں ں کی تعداد میں واضح کمی واقع ہوئی ہے۔ وزیراعلی پنجاب سردارعثمان بزدارکی قیادت میں حکومت کوروناکے تدارک کیلئے تمام تروسائل بروئے کارلارہی ہے۔ پنجاب میں کورونا کے مثبت کیسزمیں واضح کمی کا کریڈٹ انتظامیہ کوجاتا ہے۔ پنجاب کے677 ویکسینیشن سنٹرزکے ذریعے زیادہ سے زیادہ افراد کی ویکسینیشن کو یقینی بنارہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہفتہ سے 18سال عمرسے زائد افراد کی واک اِن ویکسینیشن کا آغاز کیا جارہا ہے۔ اب عوام ویکسینیشن سنٹرزپر بغیر پن کوڈ صرف شناختی کارڈ کے ساتھ آکرویکسین لگواسکیں گے۔ عوام ویکسینیشن سے متعلق کسی قسم کی رائے دینے یاشکایت کرنے کیلئے مفت ہیلپ لائن نمبر1033 پررابطہ کرسکتے ہیں۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ تمام اضلاع ویکسینشین کا ہدف جلد مکمل کریں۔

ویکسینیشن کروانے والے افرادکی سینیماء ہالز،ریسٹورنٹس اور شادیوں میں جانے کی اجازت ہوگی۔ کینسرور ایڈزجیسی مہلک بیماری میں مبتلا افرادکو ترجیحی بنیادوں پر ویکسین لگائی جائیگی۔ اجلاس میں چیف سیکرٹری پنجاب نے کہا کہ ویکسینیشن سنٹرزپر عوام کیلئے زیادہ سے زیادہ سہولیات فراہم کی جارہی ہیں۔20 فیصد آبادی کی ویکسینشین والے اضلاع میں ماسک کی پابندی کے ساتھ کاروبار مکمل کھول دئیے جائینگے۔ پنجاب میں ویکسینشین کے عمل کو بھرپور کامیاب بنایا جائے گا۔
پاکستان میں کرونا وائرس کی تیسری لہر سے متعلق تازہ ترین معلومات