Live Updates

معروف ماہر معیشت نے ملک میں مہنگائی کی شرح میں تشویش ناک اضافے کی وجوہات بتا دیں

ایک سال کے دوران عالمی مارکیٹ میں پام تیل کی قیمتوں میں 80 فیصد جبکہ خام تیل کی قیمتوں میں بھی بے تحاشہ اضافہ ہوا، ملک میں مہنگائی میں اضافہ بیرونی عوامل کی وجہ سے ہوا: ڈاکٹر حفیظ پاشا

muhammad ali محمد علی جمعرات 16 ستمبر 2021 23:54

معروف ماہر معیشت نے ملک میں مہنگائی کی شرح میں تشویش ناک اضافے کی وجوہات ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 ستمبر2021ء) معروف ماہر معیشت نے ملک میں مہنگائی کی شرح میں تشویش ناک اضافے کی وجوہات بتا دیں۔ تفصیلات کے مطابق ملک کے معروف ماہر معیشت ڈاکٹر حفیظ پاشا کی جانب سے ایک نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے ملک میں مہنگائی کی شرح میں ہونے والے تشویش ناک اضافے سے متعلق مختلف وجوہات کا ذکر کیا گیا۔

ڈاکٹر حفیظ پاشا کے مطابق ملک میں مہنگائی میں اضافہ ہونے میں بیرونی عوامل کا زیادہ کردار ہے۔ ماہر معیشت کے مطابق ایک سال کے دوران عالمی مارکیٹ میں پام تیل کی قیمتوں میں 80 فیصد جبکہ خام تیل کی قیمتوں میں بھی بے تحاشہ اضافہ ہوا۔ چونکہ پاکستان امپورٹس پر بہت زیادہ انحصار کرتا ہے اور ڈالر کی قیمت میں بھی اضافہ ہوا، اسی لیے مہنگائی میں بہت زیادہ اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے۔

(جاری ہے)

واضح رہے کہ حکومت نے گزشتہ روز پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ایک ساتھ بڑا اضافہ کر دیا تھا، تمام پٹرولیم مصنوعات کی فی لیٹر قیمت میں 5 روپے سے زائد کا اضافہ کیا گیا۔ پاکستان میں فی لیٹر پٹرول کی قیمت 123 روپے سے زائد ہو چکی، ملک میں پٹرول کبھی اتنا مہنگا نہیں ہوا۔ اس حوالے سے حکومت کا موقف ہے کہ عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے کے بعد ہمارے پاس بھی قیمتوں میں اضافہ کرنے کے علاوہ اور کوئی دوسرا راستہ نہیں تھا۔

یہاں یہ بھی یاد رہے کہ عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمت 3 سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکی۔ جمعرات کے روز عالمی مارکیٹ میں فی بیرل خام تیل کی قیمت 75 ڈالرز سے زائد کی قیمت پر فروخت ہوا۔ اس تمام صورتحال میں معاشی ماہرین کے مطابق عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے کی وجہ سے اگر پاکستان میں بھی پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مزید اضافہ ہوا، تو ملک میں مہنگائی مزید بے قابو ہو جائے گی۔
Live مہنگائی کا طوفان سے متعلق تازہ ترین معلومات