بھارت،7دنوں میں قرض کے بوجھ تلے دبے 6کسانوں کی خود کشی

بھارتی کسان کوآپریٹو بینکوں سے لیکر ساہوکاروں تک کے قرض تلے دبے ہیں

جمعہ مئی 18:22

بھوپال(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ جمعہ مئی ء)بھارتی ریاست مدھیہ پردیش میں 7دنوں میں قرض کے بوجھ تلے دبے 6کسانوں نے خود کشی کر لی،بھارتی کسان کوآپریٹو بینکوں سے لیکر ساہوکاروں تک کے قرض تلے دبے ہیں۔بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی ریاست مدھیہ پردیش میں گزشتہ ہفتے کے دوران 6کسانوں نے قرض کے بوجھ تلے دبنے سے پریشان ہوکر خودکشی کرلی۔

ریاست میں بدھ کو نرسنگھ پور ضلع کے ساتال تھانہ علاقے کے گڑوارا گائوں میں متھرا پرساد نے ڈھائی لاکھ روپے کے قرض کی عدم ادائیگی سے پریشان ہوکرزہریلا مادہ کھاکرجان دیدی۔راج گڑھ کے خان پورا تھانہ علاقہ کے بوڑا گائوں میں بنسی لال اہروار نے پھانسی لگا لی۔برہانپور میں ایک کسان نے قرض ادا کرنے کے بدلے بیٹے کو گروی رکھ دیا۔

(جاری ہے)

جب وہ قرض ادا کرنے کے بعد بچے کو بازیاب نہ کراسکاتو خود کشی کرلی۔

اجین کے بدنا ور میں بھی ایک کسان جگدیش نے قرض سے پریشان ہوکر خود کشی کرلی۔اجین کے کڈودیا میں کسان رادھے شیام اور رتلام میں ایک کسان نے جان دیدی۔عام کسان یونین کے رہنما کیدار سروہی کا کہنا ہے کہ ریاست میں ایک ہفتے میں 6کسانوں کی خود کشی کرنے سے یہ بات واضح ہوتی ہے کہ کسان پریشانی اور بنیادی سہولتوں سے دوچار ہیں۔کسان کوآپریٹو بینکوں سے لیکر ساہوکاروں تک کے قرض تلے دبے ہوئے ہیں۔کسی نے قرض لیکر بیٹیوں کی شادیاں کیں تو کسی نے اپنی فصل اور زمین کے مسائل نمٹانے کیلئے قرض لئے۔

متعلقہ عنوان :

Your Thoughts and Comments