اُردو پوائنٹ پاکستان اسلام آباداسلام آباد کی خبریںنوازشریف، مریم اور صفدر کی سزا معطلی کیخلاف نیب کی اپیل سماعت کیلئے ..

نوازشریف، مریم اور صفدر کی سزا معطلی کیخلاف نیب کی اپیل سماعت کیلئے مقرر

, کیس کی سماعت چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں جسٹس مشیر عالم اور جسٹس مظہر عالم میاں خیل پر مشتمل تین رکنی بینچ کرے گا

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 اکتوبر2018ء) سپریم کورٹ میں نوازشریف، مریم اور صفدر کی سزا معطلی کے خلاف نیب کی اپیل سماعت کے لیے مقرر کردی گئی۔ کیس کی سماعت چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں جسٹس مشیر عالم اور جسٹس مظہر عالم میاں خیل پر مشتمل تین رکنی بینچ کرے گا۔قومی احتساب بیورو(نیب) نے گزشتہ روز نوازشریف،مریم اور محمد صفدر کی سزا معطلی کا اسلام آباد ہائیکورٹ کا 19 ستمبر کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کیا تھا۔

نیب کی جانب سے دائر اپیل میں کہا گیا کہ ہائیکورٹ نے مقدمہ کے شواہد کا درست جائزہ نہیں لیا، ہائیکورٹ نے اپیل کے ساتھ سزا معطلی کی درخواستیں سننے کاحکم دیا تھا، ہائیکورٹ نے اپنے ہی حکم نامے کے برخلاف درخواستوں کی سماعت کی۔نیب کی اپیل میں اسلام آباد ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دینے کی استدعا کی گئی ہے۔

(خبر جاری ہے)

نجی ٹی وی کے مطابق سپریم کورٹ میں نیب کی اپیل بدھ کے روز سماعت کے لیے مقرر کی گئی ہے اور چیف جسٹس پاکستان نے اس حوالے سے بینچ بھی تشکیل دے دیا ہے۔

جسٹس جسٹس میاں ثاقب نثار کی جانب سے تین رکنی بینچ میں جسٹس عمر عطا بندیال اور جسٹس مشیر عالم کو شامل کیا گیا تھا تاہم جسٹس عمر عطا بندیال کی جانب سے معذرت کے بعد چیف جسٹس نے جسٹسمظہر عالم میاں خیل کو بینچ میں شامل کر لیا۔اب کیس کی سماعت چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں جسٹس مشیر عالم اور جسٹس مظہر عالم میاں خیل پر مشتمل تین رکنی بینچ کرے گا۔

چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بینچ کل سماعت کرے گا اور اس کے متعلقہ فریقین کو نوٹسز بھی جاری کردیئے گئے ہیں۔واضح رہیکہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم میاں نوازشریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد محمد صفدر کی ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا کے خلاف اپیل پر 19 ستمبر کو فیصلہ سناتے ہوئے تینوں کی سزا معطل کرکے رہائی کا حکم دیا تھا۔اسلام آباد کی احتساب عدالت نے 6 جولائی کو ایون فیلڈ ریفرنس میں نوازشریف کو 11، مریم کو 8 اور کیپٹن (ر) محمد ص?فدرکو ایک سال کی سزا سنائی تھی۔نوازشریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کو 13 جولائی کو لندن سے واپسی پر گرفتار کرکے اڈیالہ جیل منتقل کیا گیا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

اسلام آباد شہر کی مزید خبریں