قومی ٹیم کو اس نہج پر لے جائیں کہ ہر کوئی اس سے کھیلنے کو ترسے، وزیراعظم کی رمیز راجہ کو ہدایت

وزیراعظم نے چیئرمین پی سی بی کو بورڈکا ازسر نو جائزہ لینے، پی سی بی میں پروفیشنل افراد کو لانے اور کلب کرکٹ سمیت علاقائی کرکٹ کو ترجیحی بنیاد پر فروغ دینےکی ہدایت کی، ذرائع

Danish Ahmad Ansari دانش احمد انصاری بدھ 22 ستمبر 2021 23:41

قومی ٹیم کو اس نہج پر لے جائیں کہ ہر کوئی اس سے کھیلنے کو ترسے، وزیراعظم ..
اسلام آبادا (اُردو پوائنٹ، اخبار تازہ ترین، 22ستمبر 2021) نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کے دوروں کی منسوخی پر معذرت خواہانہ رویہ نہ رکھیں، قومی ٹیم کو اس نہج پر لے جائیں کہ ہر کوئی اس سے کھیلنے کو ترسے، وزیراعظم عمران خان کی چیئرمین پی سی بی رمیز راجہ کو ہدایت- تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان سے چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈ(پی سی بی) رمیز راجہ نے ملاقات کی اور وزیراعظم کو نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کے دوروں کی منسوخی پر بریفنگ دی۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم ہاؤس میں پاکستان ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ کےلیے اعلان کردہ اسکواڈ میں شامل قومی کرکٹرز نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی جس میں چیئرمین پی سی بی بھی شامل تھے تاہم رمیز راجہ نے علیحدہ بھی وزیراعظم سے ملاقات کی۔ ذرائع کا کہنا ہےکہ چیئرمین پی سی بی نے وزیراعظم کو دونوں ملکوں کے بورڈ کے سربراہان سے رابطوں پر بھی بریفنگ دی، وزیراعظم نے چیئرمین پی سی بی کو دوروں کی منسوخی پر معذرت خواہانہ رویہ نہ رکھنے کی ہدایت کی۔

(جاری ہے)

ذرائع کے مطابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ٹیم کو اس نہج پر لے جائیں کہ ہرکوئی اس کے ساتھ کھیلنےکو ترسے۔ وزیراعظم نے چیئرمین پی سی بی کو بورڈکا ازسر نو جائزہ لینےکی ہدایت کی اور پی سی بی میں پروفیشنل افراد کو لانےکی ہدایت کی، وزیراعظم نے اسکول اور کلب کرکٹ سمیت علاقائی کرکٹ کو ترجیحی بنیاد پر فروغ دینےکی ہدایت کی۔ ذرائع نےبتایا ہے کہ وزیراعظم نے انفراسٹرکچر کے حوالے سے چیئرمین پی سی بی کو روڈ میپ بھی دیا اور کہا کہ ڈومیسٹک کرکٹ کو اتنا مضبوط بنائیں کہ وہ بین الاقومی معیار سے کم نہ ہو، وزیراعظم نےکھلاڑیوں کو ہر ممکن مراعات دینےکی بھی ہدایت کی۔

دوسری جانب وزیراعظم نے قومی ٹیم کے کھلاڑیوں سے بھی ملاقات کی، ذرائع کے مطابق وزیراعظم نے کھلاڑیوں سے اپنا کرکٹ کا تجربہ شئیر کیا اور اس دوران کھلاڑیوں کا حوصلہ بڑھایا جب کہ وزیراعظم نے ہر کھلاڑی سے الگ الگ گفتگو کی۔ ذرائع کا کہنا ہےکہ وزیراعظم نے کھلاڑیوں کو میدان میں سر اٹھا کر رکھنے کی ہدایت کی اور کہا کہ کھلاڑیوں کے کندھے گرے ہوئے دیکھتے ہیں تو بہت برا تاثر جاتا ہے، ہار جیت کھیل کا حصہ ہے، آخری گیند تک ہار نہیں ماننی چاہیے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ کھلاڑیوں کو جوش و جذبے کے ساتھ میدان میں کرکٹ کھیلنی چاہیے اور مخالف کھلاڑی کو آؤٹ کرنے پر زیادہ مناسب خوشی منانی چاہیے۔ وزیراعظم عمران خان نے کھلاڑیوں کو لیکچر دیتے ہوئے کہا کہ کھلاڑی آخری دم تک لڑتا رہتا ہے اور ہار نہیں مانتا، کسی بھی صورت اپنے آپ کو کمزور نہیں سمجھنا چاہیے، بھرپور ٹریننگ کریں، محنت کریں اور 100 فیصد پرفارمنس دیں، ہمیشہ گراؤنڈ میں مثبت مائنڈ سیٹ کے ساتھ اتریں۔

انہوں نے کہا کہ اپنے دماغ سے دورہ نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کا معاملہ نکال دیں، اپنا فوکس ورلڈکپ پر مرکوز رکھیں۔ ذرائع کے مطابق وزیراعظم نے کھلاڑیوں نے کو 92 کے ورلڈکپ کی کہانی بھی سنائی اور کہاکہ 92 کے ورلڈکپ میں دنیا کو لگتا تھا کہ ہم اگلے راؤنڈ میں نہیں پہنچ سکیں گےلیکن ہم ورلڈکپ جیت گئے۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments