کراچی ایکسپو سینٹر میں جاری تین روزہ پاکستان پولٹری ڈیری اینڈ لائیو اسٹاک نمائش اختتام پذیرہوگئی

نمائش میں100 سے زائد ملکی لائیو اسٹاک کمپنیوں نے شرکت کی جن کا تعلق اجناس ،مشینری ، بریڈ ، انشورنس اور ادویات سے تھا

اتوار جولائی 18:50

ْ کراچی ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 جولائی2018ء) کراچی ایکسپو سینٹر میں جاری تین روزہ پاکستان پولٹری ڈیری اینڈ لائیو اسٹاک نمائش اتوار کو اختتام پذیرہوگئی ہے۔نمائش میں100 سے زائد ملکی لائیو اسٹاک کمپنیوں نے شرکت کی جن کا تعلق اجناس ،مشینری ، بریڈ ، انشورنس اور ادویات سے تھا جبکہ دیگر بین اقوامی ممالک میں نیدرلینڈ ، امریکہ ،چائنہ ، تھائی لینڈ ،یوکے ، آسٹریلیا،ترکی ، ہنگری ، کینیڈا اور مالائشیا کے نمائندگان شریک ہوئے۔

غیرملکی وفود نے اس نمائش کو معاشی اعتبار سے انتہائی خوش آئند قرار دییء ہوئے کہاکہ لینڈ مارک اور ڈیری اینڈ کیٹل فارمرز ایسوسی ایشن کی جانب سے منعقدہ اس تقریب کے لئے امید کرتے ہیں کہ یہ سلسلہ جاری رہے گا جبکہ پاکستان زرعی ملک ہے جہاں لائیو اسٹاک کے حوالے سے بہت گنجائش موجود ہیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ یہ نمائش لائیو اسٹاک کے شعبہ سے وابستہ افراد کے لئے مزید معاشی مواقعوں کے دروازے کھولے گی جس طرح دنیا بھر کے ممالک تمام شعبوں میں جدت اختیار کر کے معاشی اعتبار سے بلندیوں کو چھو رہے ہیں اسی طرح پاکستان کے تمام شعبہ بلخصوص لائیو اسٹاک کے شعبہ میں جدت لانے کی ضرورت ہے تا کہ بہتر نتائج میسر آسکے اس موقع پر نمائش میں شرکت کرنے والوں سے خطاب کرتے ہوئے لینڈ مارک کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر علی ہمدانی نے کہاکہ اس نوعیت کی نمائش پاکستان میں پہلی بار منعقد کی گئی ہے جہاں قومی اور بین القوامی سمیت تمام ملکی اسٹیک ہولڈرز کی شراکت داری کو یقینی بنایا گیا ہے تا کہ لائیو اسٹاک , پولٹری اور ڈیری سیکٹر کو ترقی کی طرف گامزن کیا جاسکا ہے۔

انہوں نے کہاکہ اس شعبہ کا مستقبل تابناک ہے اور جس طرح پاکستان پولٹری ایسوسی ایشن , ڈیری اینڈ کیٹل فارمرز ایسوسی ایشن ,پاکستان گوٹھ ایسوسی ایشن , سندھ بورڈ آف انویسٹمنٹ ،ڈیری لیک ، کیٹل کٹ اور سمیڈا کے عہدادران نے اس کی اہمیت کو سمجھتے ہوئے اس نمائش کو کامیاب بنایا ہے ہم ان سب کا شکریہ ادا کرتے ہیں جبکہ ڈیری اینڈ کیٹل فارمرز ایسوسی ایشن کے صدر شاکر عمر گجر نے تقریب میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ نمائش امید کی ایک کرن ہے جس سے فارمرز کو بڑی امیدیں وابستہ ہوگئی ہیں جس طرح لوگوں نے اس پروگرام میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے وہ قابل تحسین ہیں اور اب ہم سب کو اس شعبہ کی ترقی کے لئے جدید طرز کو اپنانے کی ضرورت ہے مختلف فارمرز نے دودھ کے حوالے سے مشینری اور ادوایات کی ڈیلز کی ہیں جو فارمرز کے لئے انتہائی ضروری تھی جس کے باعث بیشتر مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے انہوں نے کہاکہ ڈیری اور مویشیوں پر لگنے والی لاگت میں کمی واقع ہوگی تو یقینا اس کا فائدہ عوام تک پہنچے گا جس سے حقیقی معنوں میں ملکی معیشت کو فروغ ملے گا دوسری جانب اس نمائش میں متعلقہ شعبہ سے تعلق رکھنے والے افراد نے بڑی تعداد میں اپنی شرکت کو یقینی بنا کر اس چیز کا احساس دلایا ہے کہ یہ نمائش کس قدر اہمیت کی حامل ہے۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments