اُردو پوائنٹ پاکستان لاہورلاہور کی خبریںپی ٹی آئی شہباز شریف کو ایوان سے باہر کرنے کے لیے سرگرم ہو گئی پی ٹی ..

پی ٹی آئی شہباز شریف کو ایوان سے باہر کرنے کے لیے سرگرم ہو گئی

پی ٹی آئی رہنما مسرت جمشید چیمہ نے شہباز شریف کی قومی اسمبلی کی رکنیت منسوخ کرنے کے لیے قرارداد جمع کروا دی

لاہور (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔23اکتوبر 2018ء) پاکستان تحریک انصاف شہباز شریف کی قومی اسمبلی کی رکنیت ختم کرنے کے لیے میدان میں آ گئی ہے۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ پی ٹی آئی نے سابق وزیر اعلیٰ پنجاب اور اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی رکنیت کو منسوخ کرنے کے لیے قرارداد اسمبلی میں جمع کروا دی ہے۔قرارداد تحریک انصاف کی رکن مسرت جمشید چیمہ نے جمع کروائی۔

قرارداد کے متن میں کہا گیا ہے کہ پرویز الہیٰ کا شہباز شریف سے متعلق انٹرویو حقائق پر مبنی ہے۔شہباز شریف نے نیب تحقیقات سے متعلق قومی اسمبلی میں جھوٹ بولا۔جب کہ دوسری طرف بتایا گیا ہے کہ سابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کے لیے ایک بری خبر آ گئی ہے۔نیب نے شہباز شریف کے خلاف 70گواہوں پر مشتمل ایک فہرست تیار کر لی۔

(خبر جاری ہے)

ان گواہان میں  ایل ڈی اے پنجاب لینڈ ڈویلپمنٹ کمپنی اور محکمہ خزانہ سمیت اور کئی محکموں کے افسران شامل ہیں۔

اس کے علاوہ بینکنگ ماہرین اور نیب کے افسران بھی شامل ہیں۔فہرست میں چوہدری لطیف ایند کمپنی کے مالکان بھی شامل ہیں۔جوائنٹ رجسٹرار سیکورٹی اینڈ ایکسچینج پاکستان سدرہ منصور کا نام بھی فہرست میں شامل ہے.70سے زائد افسران آشیانہ ہاؤسگ اسکیم میں گرفتارشہباز شریف،فواد حسن فواد اور احمد چیمہ کے خلاف نیب کے موقف کی تائید کریں گے۔ ان 70سے زائد افسران کی بنیاد پر شہباز شریف،احد چیمہ اور فواد حسن فواد کو احتساب کی طرف سے سزا دلانے کی استدعا کی جائے گی۔جب کہ دوسری طرف اپوزیشن بھی شہباز شریف کی گرفتاری کے خلاف سراپا احتجاج ہے۔سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف ہی ہوں گے خواہ وہ جیل میں ہی کیوں نہ ہوں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

لاہور شہر کی مزید خبریں