بلوچستان کی7 اضلاع میں 7روزہ خصوصی انسداد پولیو مہمپیر سے شروع ہوگی،راشدرازاق

پولیو مہم کے دوران پانچ سال تک کی عمر کے 10لاکھ سے زائد بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے پولیو مہم کے دوران 4ہزار460کے قریب ٹیمیں حصہ لینگی،کوارڈینیٹرایمرجنسی آپریشن سینٹربلوچستان

اتوار اگست 21:40

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 25 اگست2019ء) ایمرجنسی آپریشن سینٹر بلوچستان کے کوارڈینیٹر راشد رزاق نے کہا ہے کہ بلوچستان سمیت ملک کے دیگر حصوں میں حالیہ پولیو کیسز رپورٹ ہونے کے بعد آج سے بلوچستان میں خصوصی پولیو مہم شروع کی جارہی ہے۔ بلوچستان کی7 اضلاع میں 7روزہ خصوصی پولیو مہم شروع کی جائے گی26 اگست سے،کوئٹہ اور پشین میں 28 اگست سے نصیرآباد، جعفرآباد، جھل مگسی، صحبت پورجبکہ قلعہ عبداللہ میں 2ستمبر سے پولیومہم شروع کی جائے گی۔

انہوں نے بتایا کہ بلوچستان میں رواں سال پولیو کے چار کیسز سامنے آئے ہیں دو قلعہ عبداللہ، ایک کوئٹہ جبکہ ایک جعفرآباد میں رپورٹ ہوا ہے جس کی بنیاد پر پولیو کی خصوصی مہم شروع کی جارہی ہے۔ پولیو مہم کے دوران پانچ سال تک کی عمر کے 10لاکھ سے زائد بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔

(جاری ہے)

ایمرجنسی آپریشن سینٹر بلوچستان کے کوارڈینیٹر راشد رزاق نے کہا ہے کہ پولیو مہم کے دوران4ہزار460کے قریب ٹیمیں حصہ لینگی جبکہ 3ہزار732 موبائل ٹیمیں 265فکسڈ سائیڈاور383 ٹرانزٹ ٹیمیں شامل ہونگی۔

واضح رہے کہ پوری دنیا میں پاکستان اور افغانستان ایسے ممالک میں شامل ہیں جہاں پولیو وائرس ابھی تک موجود ہے، رواں سال پاکستان میں پولیو کے 53کیسز سامنے آئے ہیں جو کہ ہمارے لئے ایک چیلنج ہے۔جس کے خلاف ہم سب کو ملکر اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ خصوصا والدین سے گذارش ہے کہ کسی قسم کے بھی منفی پراپیگنڈے پر کان نہ دھریں کیونکہ حال ہی میں ہونے والے کیسز کی ایک بڑی وجہ عدم تعاون بھی ہے۔

ہمیں اپنے بچوں کا مستقبل صحت مند اور محفوظ بنانے کے لئے ان قطروں کا پھلاناضروری ہے۔ صرف ویکسین کے ذریعے ہی بچوں کو پولیو سے بچایا جا سکتا ہے۔پولیو مہم کو کامیاب بنانے کے لیے علمائے کرام، سیاسی، سماجی رہنماؤں سمیت قبائلی عمائدین کو بھی اپنا کردار ادا کرنا ہوگا تاکہ ہمارے معاشرے سے یہ خطرناک وائرس کا خاتمہ یقینی ہوسکے۔

کوئٹہ شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments