انڈسٹریل پارک سرگودھا کرپشن سکینڈل میں گرفتار ملزم زاہد محمود کی درخواست ضمانت پر ڈی جی نیب (آکل )ریکارڈ سمیت طلب

نیب نے انڈسٹریل پارک سرگودھا کرپشن سکینڈل میں گرفتار کیا ،ریفرنس میں بے قصور پایا گیا اسکے باوجود دو ماہ سے جیل میں ہوں‘ موقف

منگل اپریل 21:22

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 اپریل2018ء) لاہور ہائیکورٹ نے انڈسٹریل پارک سرگودھا کرپشن سکینڈل میں گرفتار ملزم زاہد محمود کی درخواست ضمانت پر ڈی جی نیب کو کل ( بدھ ) ریکارڈ سمیت طلب کر لیا ۔ گزشتہ روز لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس قاسم علی خان کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی ۔ درخواست گزار ملزم زاہد محمود کی جانب سے بیرسٹر یحییٰ چیمہ نے دلائل دیئے۔

(جاری ہے)

درخواست گزار کے وکیل نے بتایا کہ نیب نے میرے موکل زاہد محمود کو انڈسٹریل پارک سرگودھا کرپشن سکینڈل میں گرفتار کیا جو نیب ریفرنس میں بے قصور پایا گیا لیکن بے گناہ ہونے کے باوجود 2ماہ سے جیل میں ہے اور احتساب عدالت نے بھی درخواست ضمانت خارج کر دی۔ وکیل نے مزید کہا کہ موکل تفتیش میں بے گناہ ہونے کے باوجود نیب کی تحویل میں ہے جو کہ قانون کے منافی ہے اور نیب اختیارات سے تجاوز کر رہا ہے۔دوران سماعت نیب کے وکیل عدالت کو دلائل سے مطمئن نہ کرسکے۔ جس پر فاضل عدالت نے ریمارکس دیئے کہ نیب نے کس قانون کے تحت بے گناہ شہری زاہد کو تحویل میں رکھا ہوا ہے۔عدالت نے ڈی جی نیب کو آج ریکارڈ سمیت طلب کر لیا ۔

متعلقہ عنوان :