وزیر خارجہ خواجہ محمد آصف کی برطانوی ہم منصب بورس جانسن سے ملاقات، علاقائی و عالمی امور پر تبادلہ خیال

دونوں ممالک کا تجارت بڑھانے، سرمایہ کاری کو فروغ دینے کے ذریعے دو طرفہ تعلقات کو مزید مستحکم کرنے کے عزم کا اعادہ وزیر خارجہ نے پاک بھارت تعلقات، مقبوضہ کشمیر کی صورتحال ،ایل او سی اور ورکنگ باونڈری پر بھارتی سیز فائر کی خلاف ورزیوں بارے بھی آگاہ کیا

منگل اپریل 22:48

وزیر خارجہ خواجہ محمد آصف کی برطانوی ہم منصب بورس جانسن سے ملاقات، ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 اپریل2018ء) وفاقی وزیر خارجہ خواجہ محمد آصف نے برطانوی سیکرٹری برائے خارجہ ودولت مشترکہ امور بورس جانسن سے ملاقات میں تجارت بڑھانے، سرمایہ کاری کو فروغ دینے کے ذریعے دو طرفہ تعلقات کو مزید مستحکم کرنے کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔ ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق منگل کو وزیرخارجہ خواجہ محمد آصف نے لندن میں دولت مشترکہ کے سربراہ اجلاس کے موقع پر برطانوی سیکرٹری برائے خارجہ و دولت مشترکہ امور بورس جانسن سے ملاقات کی۔

ملاقات میں دونوں وزرائے خارجہ نے تجارت بڑھانے اور سرمایہ کاری کو فروغ دینے کے ذریعے دو طرفہ تعلقات کو مزید مستحکم کرنے کے عزم کا اعادہ کیا ۔ ملاقات کے دوران علاقائی وعالمی امور پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا ۔

(جاری ہے)

بات چیت کے دوران دو طرفہ تعلقات میں پیشرفت کا جائزہ لیا گیا اور ان تعلقات کو تجارت میں اضافے، سرمایہ کاری اور تعلیمی و ثقافتی تعاون کو فروغ کے ذریعے مزید مستحکم کرنے کے عزم کا اعادہ کیا گیا۔

برطانوی وزیر خارجہ نے کہا کہ برطانیہ پاکستان کیساتھ اپنے تعلقات کو بڑی اہمیت دیتا ہے اور اسے مزید فروغ دینے کا خواہاں ہے۔ سیکرٹری خارجہ نے پاکستان کی انسداد دہشت گردی کے حوالے سے کامیابیوں اور خطے میں امن و سلامتی کے قیام میں پاکستان کی کوششوں کو سراہا۔ وزیر خارجہ خواجہ آصف نے برطانوی سیکرٹری خارجہ جانسن کو پاک بھارت تعلقات ،،مقبوضہ کشمیر میں صورتحال اور بھارت کی جانب سے ایل او سی اور ورکنگ باونڈری پر سیز فائر کی خلاف ورزیوں کے حوالے سے بریف کیا۔وزیر خارجہ نے بورس جانسن کو دونوں ملکوں کے درمیان انہینسڈ سٹریٹجک ڈائیلاگ کے اگلے مرحلے کیلئے پاکستان کے دورے کی دعوت دی جو انہوں نے قبول کر لی۔

متعلقہ عنوان :