توہین عدالت کیس ،ْ فیصل رضا عابدی کو اگلی سماعت پر پکڑ کر لایا جائے ،ْچیف جسٹس کا حکم

پروگرام نشر ہونا ہماری غلطی ہے ،ْمعذرت کر چکے ہیں ،ْ اینکر کو بھی فارغ کر دیا ہے ،ْ نمائندہ نجی ٹی وی چینل

بدھ اپریل 13:24

توہین عدالت کیس ،ْ فیصل رضا عابدی کو اگلی سماعت پر پکڑ کر لایا جائے ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 اپریل2018ء) سپریم کورٹ آف پاکستان نے پیپلز پارٹی کے سابق سینیٹر فیصل رضا عابدی کے خلاف توہین عدالت کیس میں پیش نہ ہونے پر حکم دیا ہے کہ انہیں اگلی سماعت پر پکڑ کر لایا جائے۔ منگل کو چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے نجی چینل پر پروگرام کے دوران عدلیہ مخالف بات کرنے پر توہین عدالت نوٹس کی سماعت کی۔

سماعت شروع ہوئی تو چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ کہاں ہے فیصل رضا عابدی ،ْ جس پر عدالت کو بتایا گیا کہ وہ موجود نہیں۔سپریم کورٹ نے متعلقہ تھانے کو حکم دیا کہ فیصل رضا عابدی کی حاضری آئندہ سماعت پر یقینی بنائی جائے اور اگلی سماعت پر انہیں پکڑ کر لایاجائے۔چیف جسٹس نے فیصل رضا عابدی کا عدلیہ مخالف بیان نشر کر نے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے نجی ٹی وی چینل کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کردیاچیف جسٹس نے کہا کہ کیا یہ آزادی اظہار رائے ہی چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ کیا چینل نے پروگرام نشر ہونے سے پہلے نہیں دیکھا تھا جس پر چینل کے نمائندے نے کہا کہ پروگرام نشر ہونا ہماری غلطی ہے۔

(جاری ہے)

چیف جسٹس نے کہا کہ غلطی تھی تو توہین عدالت نوٹس کا جواب جمع کرائیں جس پر وکیل نجی ٹی وی نے کہا کہ معذرت کر چکے ہیں اور اینکر کو بھی فارغ کر دیا ہے۔چیف جسٹس نے کہا کہ کیا ایسے معافی ہوتی ہے، پروگرام کر ہیں اورمعافی مانگ لیتے ہیں، ہم آپ کی معافی قبول نہیں کر رہے۔عدالت نے فیصل رضا عابدی کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت 3 مئی تک کیلئے ملتوی کردی۔