پاکستان کو ہر سال 13 لاکھ اضافی ملازمتیں پیدا کرنے کی ضرورت ہے،یو این ڈی پی رپورٹ

منگل مئی 23:51

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 مئی2018ء) اقوام متحدہ ڈویلپمنٹ پروگرام (یو این ڈی پی) کی نیشنل ہیومن ڈویلپمنٹ رپورٹ (این ایچ ڈی آر) کے مطابق پاکستان کو ہر سال 13 لاکھ اضافی ملازمتین پیدا کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ 2035ء تک کام کرنے والے لوگوں کی تعداد حالیہ 40 لاکھ سے بڑھ کر 50 لاکھ تک پہنچ جائے گی۔ این ایچ ڈی آر کا کہنا ہے کہ کام کی عمر میں داخل ہونے والے نوجوانوں کا سامنا کرنے کیلئے ملازمتوں کی تعداد میں اضافہ ناگزیر ہے۔

رپورٹ کے مطابق حالیہ افرادی قوت اور بیروزگاری کی شرح اس بات کی نشاندہی کرتی ہے کہ پاکستان میں کام کرنے والے عمر کے 35 لاکھ افراد بیروزگار ہیں۔ رپورٹ کے مطابق پاکستان کو اگلے پانچ سال کے دوران 45 لاکھ روز گار کے مواقع پیدا کرنے کی ضرورت ہے۔

(جاری ہے)

رپورٹ میں بتایا گیا کہ اگر اضافی ملازمتیں پیدا نہیں کی گئیں تو 2050ء تک 43 ملین افراد بے روزگار ہو سکتے ہیں۔

اندازوں کے مطابق پاکستان کو اگلے 30 سالوں تک ہر سال بغیر کسی وقفہ کے 0.9 ملین ملازمتیں پیدا کرنا ہوں گی۔ یہ بھی واضح ہے کہ ملک کے بعض شہری مراکز یا معیشت کا کوئی سیکٹر یہ تمام ملازمتیں پیدا نہیں کر سکتا۔ روزگار کے ان اہداف کے حصول کیلئے معیشت کے ہر سیکٹر، ہر شہر، قصبہ اور گائوں کو اس میں اپنا کردار ادا کرنا ہو گا۔ زرعی سیکٹر روزگار پیدا کرنے کا پاکستان (42.3 فیصد) کا اہم ذریعہ ہے۔ اس کے علاوہ مینوفیکچرنگ، سروسز انڈسٹری، ٹوارزم میں بھی روزگار کے بے پناہ مواقع پائے جاتے ہیں۔ آئی ایل او کے مطابق پاکستان میں 15 سے 24 سال عمر کے مابین نوجوانوں کی 10.8 فیصد بے روزگار ہے۔

متعلقہ عنوان :