نگران وزیراعلیٰ پنجاب حسن عسکری رضوی کی زیر صدارت

وزیراعلیٰ آفس میں امن وامان سے متعلق اجلاس ْالیکشن کے پرامن ا نعقاد کو یقینی بنانے کیلئے ہر ممکن اقدامات کئے جائیںگی: حسن عسکری رضوی ْعام انتخابات میں ووٹرز کو اپنے حق رائے دہی کے استعما ل کیلئے پر امن ماحول یقینی بنائیںگے نگران حکومت شفاف ،آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کے انعقاد کو یقینی بنانے کیلئے تمام تر توانائیاں صرف کریگی،چاند رات ،عید اورعید تعطیلات کے دوران سکیورٹی اورامن عامہ کیلئے خصوصی اقدامات کیے جائیں ، سیاسی رہنماؤں کی سکیورٹی کیلئے تمام سیاسی جماعتوں کیساتھ قریبی کوآرڈینیشن رکھی جائی:نگران وزیراعلیٰ کا اجلاس سے خطاب

ہفتہ جون 20:26

نگران وزیراعلیٰ پنجاب حسن عسکری رضوی کی زیر صدارت
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 جون2018ء) نگران وزیراعلیٰ پنجاب حسن عسکری رضوی کی زیر صدارت یہاںوزیراعلیٰ آفس میں امن وامان سے متعلق اجلاس منعقد ہوا،جس میںنگران وزیراعلیٰ پنجاب کوسکیورٹی سمیت صوبے میں امن عامہ کے قیام کیلئے کیے جانیوالے اقدامات پر بریفنگ دی گئی۔نگران وزیراعلیٰ حسن عسکری رضوی نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ الیکشن کے پرامن ا نعقاد کو یقینی بنانے کیلئے ہر ممکن اقدامات کئے جائیںگے اورعام انتخابات میں ووٹرز کو اپنے حق رائے دہی کے استعما ل کیلئے پر امن ماحول یقینی بنائیںگے۔

انہوںنے کہا کہ نگران حکومت شفاف ،آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کے انعقاد کو یقینی بنانے کیلئے تمام تر توانائیاں صرف کریگی۔عام انتخابات کا پرامن اور غیر جانبدار انعقاد قومی ذمہ داری ہے جسے ہر حال میں پورا کریں گے۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہا کہ عید کے بعد سیاسی سرگرمیاں بڑھنے سے پولیس اورقانون نافذ کرنیوالے اداروں کی ذمہ داریاں بھی بڑھیں گی۔

انہوںنے کہا کہ سیاسی رہنماؤں کی سکیورٹی کیلئے تمام سیاسی جماعتوں کیساتھ قریبی کوآرڈینیشن رکھی جائے ۔انہوںنے کہا کہ امن عامہ کی فضا کو یقینی بنانے کیلئے ہر ضروری اقدام اٹھایا جائی-نگران وزیراعلیٰ نے کہا کہ چاند رات ،،عید اورعید تعطیلات کے دوران سکیورٹی اورامن عامہ کیلئے خصوصی اقدامات کیے جائیں ۔اجلاس میں چاندرات،،عید اورعیدکی تعطیلات کے دوران عوام کے جان ومال کے تحفظ کیلئے کئے جانیوالے اقدامات کا جائزہ لیا گیا-نگران وزیراعلیٰ کو صحافی اسد کھرل پر تشدد کے واقعہ کی رپورٹ پیش کی گئی۔چیف سیکرٹری ،ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ،انسپکٹر جنرل پولیس،،سول و عسکری اداروں کے اعلی حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔