این اے 53 اسکروٹنی ،ْعمران خان یا وکیل پیش نہیں ہوئے، (آج) تک کا وقت طلب

این اے 53 سے انتخابات لڑنے والے امیدواروں کی حتمی فہرست 19 جون کو جاری کی جائیگی

پیر جون 13:10

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 جون2018ء) عام انتخابات 2018 کے سلسلے میں اسلام آباد کے حلقے این اے 53 کے امیدواروں کی اسکروٹنی کے دور ان پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان یا ان کے وکیل پیر کو پیش نہیں ہوئے۔واضح رہے کہ الیکشن کمیشن نے این اے 53 کے امیدواروں عمران خان،، سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی اور سابق پی ٹی آئی رکن عائشہ گلالئی کو آج ذاتی حیثیت میں طلب کیا تھا۔

گزشتہ روز یہ رپورٹس سامنے آئی تھیں کہ عمران خان کے بجائے ان کے وکیل بابر اعوان ریٹرننگ افسر کے سامنے پیش ہوں گے بعدازاں معاون وکیل رائے تجمل کا بیان سامنے آیا کہ بابر اعوان ریٹرننگ افسر کے سامنے پیش نہیں ہوئے ۔رائے تجمل کا کہنا تھا کہ بابر اعوان لاہور میں ہیں اور وہ وہاں عمران خان کی اسکروٹنی کیلئے پیش ہوئے ۔

(جاری ہے)

معاون وکیل کا مزید کہنا تھا کہ (آج) منگل تک کا وقت دیا جائے ،ْبابر اعوان پیش ہوجائیں گے۔

واضح رہے کہ پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان کے کاغذات نامزدگی پرعبدالوہاب بلوچ نے اعتراضات دائر کر رکھے ہیں، اس لیے عمران خان کو کاغذات کی جانچ پڑتال کے ساتھ اعتراضات کا جواب دینا ہوگا۔۔حلقہ این اے 53 سے 63 امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں جن میں عمران خان،، شاہد خاقان عباسی اور عائشہ گلالئی کے علاوہ مسلم لیگ (ن) کے بیرسٹر ظفر اللہ، مہتاب عباسی اور پی ٹی آئی کے الیاس مہربان بھی شامل ہیں۔این اے 53 سے انتخابات لڑنے والے امیدواروں کی حتمی فہرست 19 جون کو جاری کی جائیگی۔واضح رہیکہ چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے لاہور کے حلقہ این اے 131 اور کراچی کے حلقہ این اے 243 سے بھی کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں جن کے خلاف بھی اعتراضات دائر کیے گئے ہیں۔