بھارت سے شکست کے بعد چئیرمین پی سی بی کے استعفی کا مطالبہ

چئیرمین پی سی بی اور چیف سلیکیٹر سمیت دیگر ذمہ داران کے استعفے کے لیے پنجاب اسمبلی میں قرارداد جمع

پیر جون 21:03

بھارت سے شکست کے بعد چئیرمین پی سی بی کے استعفی کا مطالبہ
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 17 جون2019ء) ورلڈ کپ میں مایوس کن کارگردگی کے بعد چئیرمین پی سی بی اور چیف سلیکیٹر سمیت دیگر کے استعفے کے لیے قرارداد جمع کروا دی گئی ہے۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ بھارت کے ہاتھوں شکست کے بعد چئیرمین پی سی بی اور چیف سلیکیٹر سمیت دیگر کے استعفے کے لیے پنجاب اسمبلی میں استعفی کی قرارداد جمع کروائی گئی ہے۔

قرارداد رکن اسمبلی رخسانہ کوثر نے جمع کروائی۔رخسانہ کوثر کا کہنا ہے کہ ورلڈ کپ ٹیم میں قومی ٹیم نے انتہائی مایوس کن کارگردگی دکھائی۔جب کہ وزیراعظم عمران خان نے بھی کھلاڑیوں کو ریلو کٹا قرار دے دیا ہے۔جب کہ دوسری جانب ورلڈکپ 2019میں پاکستان کیبھارت کے ہاتھوں شکست کے بعد سیمی فائنل میں جگہ بنانے کے لیے اگر مگر کا کھیلشروع ہوگیا۔

(جاری ہے)

انگلینڈ میں جاری کرکٹ ورلڈکپ کے بڑے میچ میں ڈک ورتھ لوئس میتھڈ کے ذریعے بھارت نے پاکستان کو 89 رنز سے شکست دی ہے۔گرین شرٹس اب تک ایونٹ میں اپنے 5 میچز کھیل چکی ہے جس میں اسے 3 میں شکست کا سامنا کرنا پڑا جب کہ ایک میں کامیابی حاصل ہوئی اور ایک میچ بارش کی نذر ہوا۔ قومی ٹیم پوائنٹس ٹیبل پر 3 پوائنٹس کے ساتھ 9 ویں نمبر پر موجود ہے، پاکستان اگر اپنے اگلے چاروں میچز جیتے تو اس کے 11 پوائنٹس ہوں گے۔

نیوزی لینڈ، جنوبی افریقہ اور بنگلادیش آگے آنے والے میچز نہ جیتیں اور ویسٹ انڈیز بھی کم از کم دو میچز ہار جائے تو پاکستان سیمی فائنل میں پہنچ سکتا ہے، ورنہ قومی ٹیم کی وطن واپسی ہوگی۔دلچسپ بات یہ ہے کہ ورلڈکپ 1992میں بھی پاکستانی ٹیم کے ابتدائی پانچ میچز میں صرف 3 ہی پوائنٹس تھے، تو یہ کہا جاسکتا ہے کہ اگر قسمت نے ساتھ دیا اور پلیئرز نے پرفارم کیا تو27سال پرانی تاریخ ایک بار پھر دہرائی جاسکتی ہی