آئی جی پنجاب سے کینیڈین ہائی کمیشن کے تین رکنی وفد کی سنٹرل پولیس آفس میں ملاقات

دوران ملاقات منشیات فروشوں کے نیٹ ورک کے خلاف آپریشنز کیلئے انفارمیشن شیئرنگ کو مزید بڑھانے پر اتفا ق چیئرنگ کراس، داتا دربار دھماکوں سمیت دہشت گردی کے متعدد کیسز ٹریس کرنے میں سیف سٹی کیمروں نے اہم کردار ادا کیا‘کیپٹن (ر)عارف نواز

جمعہ ستمبر 17:46

آئی جی پنجاب سے کینیڈین ہائی کمیشن کے تین رکنی وفد کی سنٹرل پولیس آفس ..
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 20 ستمبر2019ء) انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب کیپٹن (ر)عارف نواز خان نے کہا ہے کہ پنجاب پولیس شہریوں کی جان وما ل کے تحفظ اور سماج دشمن عناصر کے قلع قمع کیلئے ماڈرن پولیسنگ کی طرز پر انفارمیشن ٹیکنالوجی کو موثر طور پر استعمال کر رہی ہے اور لاہور ، قصور، سیالکوٹ ، میانوالی سمیت صوبے کے دیگر اضلاع میں مانیٹرنگ اینڈ سرویلنس کے جدید انٹی گریٹڈ سمارٹ اینڈ سرویلنس سسٹم کا آغاز کیا گیا ہے جن کی بدولت حساس تنصیبات، تعلیمی اداروں،اقلیتی عبادت گاہوں سمیت دیگر اہم مراکز کی سیکیورٹی انتظامات میں مزید بہتری آئی ہے ،پولیس فورس کی استعداد کار میں اضافے کے لیے سکول آف انویسٹی گیشن کے قیام اور تربیتی نصاب کی اپ گریڈیشن سمیت دیگر پراجیکٹس شروع کئے گئے ہیں جبکہ ساتھ ہی منشیات فروشوںکے نیٹ ورکس کے خاتمے کیلئے انفارمیشن بیسڈ آپریشنز جاری ہیں جن کا مقصد سماج دشمن عناصر کا مستقل بنیادوں پر خاتمہ یقینی بنا کر نوجوان نسل کو ان کی کاروائیوں سے محفوظ رکھنا ہے ۔

(جاری ہے)

ان خیالات کا اظہار انہوں نے سنٹرل پولیس آفس میں کینیڈین ہائی کمیشن کے تین رکنی وفد سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ کینیڈین وفد میں وینڈی گلمور،جوئین منس اورپرہم فریڈشامل تھے۔ دوران ملاقات دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پنجاب پولیس کی کاوشوں سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیاجبکہ منشیات فروشوں کے نیٹ ورک کے خلاف آپریشنز کوموثر بنانے کیلئے دونوں اداروں کے مابین انفارمیشن شیئرنگ کو مزید بڑھانے پر اتفاق رائے کیا گیا۔

آئی جی پنجاب نے کینیڈین وفد کو سیف سٹی سمیت پنجاب پولیس کے دیگر جدیدپراجیکٹس سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ لاہورمیں چئیرنگ کراس، داتا دربار دھماکوں سمیت دہشت گردی کے متعدد کیسز ٹریس کرنے میں سیف سٹی کیمروں نے اہم کردار ادا کیااور پنجاب پولیس جدید ٹیکنالوجی کی بدولت دہشت گردوں، انکے سہولت کاروں اور فنانشل نیٹ ورک کے خاتمے کے قریب ہے۔

کینیڈین وفد نے دہشت گرد، شرپسند اور سماج دشمن عناصر کے خلاف پنجاب پولیس کی بروقت کاروائیوں کو قابل ستائش قرار دیا۔ اس موقع پرکینیڈین وفد میں شامل مِس وینڈی گلمورکا کہنا تھاکہ بڑے شہروں کے ساتھ ساتھ چھوٹے شہروں میںمانیٹرنگ اینڈ سرویلنس سسٹم کا آغاز خوش آئند ہے جس سے جرائم کی وارداتوںپر قابو پانے میں مزید مدد ملے گی۔دوران ملاقات پنجاب پولیس اورکینیڈین ہائی کمیشن کے مابین انفارمیشن شئیرنگ اور باہمی تعاون کو بڑھانے کا فیصلہ کیا گیاجبکہ آخر میں آئی جی پنجاب اورکینیڈین ہائی کمیشن افسران کے مابین یادگاری سووینئر کا تبادلہ بھی کیا گیا۔