سندھ ہائیکورٹ کی طرف سے پابندی کے باوجود ہوسڑی پولیس مین پوری اور گٹکا سمیت دیگر نشہ آور اشیاء کی فروخت روکنے میں ناکام

جمعرات ستمبر 03:55

حیدرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 03 ستمبر2020ء) سندھ ہائیکورٹ کی طرف سے پابندی کے باوجود ہوسڑی پولیس مین پوری اور گٹکا سمیت دیگر نشہ آور اشیاء کی فروخت روکنے میں ناکام ہے، علاقے میں مین پوری، گٹکا، چرس،افیون، کچی شراب سمیت دیگر نشہ آوور اشیا ء کھلے عام فروخت ہورہی ہے جبکہ ایس ایس پی حیدرآباد بھی خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں اور اس سلسلے میں کوئی کاروائی نہیں کی جا رہی، ذرائع کے مطابق ایجنٹوں کے ذریعے پولیس ان اڈوں سے ہفتہ وصول کررہی ہے جبکہ خانہ پوری کے لئے شریف لوگوں کو تنگ کیاجارہاہے علاقے کی سیاسی وسماجی شخصیات نے ہوسڑی میں منشیات اور مین پوری گٹکے کے کھلے عام کاروبار پر تشویش کااظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ ہائیکورٹ کے واضح احکامات کے باوجود پولیس کھلے عام ان جرائم کی سرپرستی کررہی ہے، انہوںنے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا کہ علاقے میں ہونے والے غیر قانونی کام کو روک کر نوجوان نسل کو تباہی سے بچایا جائے ۔