نامور کمپیئر، کالم نگار اور مصنف دلدار پرویز بھٹی کی برسی 30اکتوبر کو منائی جائیگی

اردو، انگریزی اور پنجابی زبانوں میں برجستہ مزاح ان کی کمپیئرنگ کا خاصہ تھا

منگل اکتوبر 11:42

نامور کمپیئر، کالم نگار اور مصنف دلدار پرویز بھٹی کی برسی 30اکتوبر کو ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 27 اکتوبر2020ء) پاکستان ٹیلی ویژن اور ریڈیو کے نامور کمپیئر، کالم نگار اور مصنف دلدار پرویز بھٹی کی 29ویں برسی 30اکتوبر بروز کو منائی جائے گی ۔وہ 30نومبر 1948ء کو گوجرانوالہ میں پیدا ہوئے اور ابتدائی تعلیم بھی یہیں سے حاصل کی۔دلدار بھٹی نے اپنے کیریئر کا آغاز بطور استادکیا تھا اور ساہیوال کے گورنمنٹ کالج میں لیکچرار تعینات ہوئے۔

مختصرعرصے میں سینکڑوں دلوں میں گھر کرنے والے ٹی وی اور ریڈیو کے ہر دلعزیز کمپیئر اپنی حاضر جوابی میں بے مثال تھے۔بیک وقت اردو، انگریزی اور پنجابی زبانوں پر عبور، ان کی پہچان کی وجہ بنا اور اِن تینوں زبانوں میں برجستہ مزاح ان کی کمپیئرنگ کا خاصہ تھا۔پی ٹی وی کو پنجابی میں پہلا کوئز شو شروع کرنے کا آئیڈیا دلدار پرویز بھٹی نے دیا اور ’’ٹاکرا‘‘نامی اس پروگرام سے اپنے فنی سفر کا آغاز کیا۔

(جاری ہے)

اس کے علاوہ میلہ، یادش بخیر، اور پنجند جیسے مقبول عام پروگرام بھی کامیابی سے پیش کئے۔وہ پی ٹی وی سے 1974 سے 1994 تک منسلک رہے اور اس دوران انہوںنے کمپیئرنگ کو نئی جہتوں سے روشناس کرایا اور اپنے علم و فراست، شائستگی اور حاضر دماغی سے لاکھوں دلوں میں جگہ بنائی۔انہوں نے ٹی وی پر ’’جواں فکر ‘‘کے نام سے بھی پروگرام پیش کیا اور اخبارات میں کالم بھی لکھتے رہے اور اپنی زندگی میں تین کتابوں کو تحریر کیا، جن میں’’دلداریاں‘‘،’’ آمنا سامنا ‘‘اور ’’دلبر دلبر‘‘ نمایاں ہیں۔30اکتوبر 1994ء میں امریکہ میں شوکت خانم کینسر ہسپتال کے لئے فنڈز جمع کرنے کے دوران دماغ کی شریان پھٹ جانے سے دلدار پرویز بھٹی کا انتقال ہوا۔