پاکستان کا فرانس سے سفیر بلانے پر غور، تاہم میں کئی ماہ سے پیرس میں کوئی سفیر تعینات ہی نہیں

تین ماہ قبل معین الحق کے چین تبادلے کے بعد پاکستان نے فرانس میں کوئی سفیر تعینات ہی نہیں کیا، سینیئر سفارتکار پیرس میں سفارتخانے کے معاملات دیکھ رہا ہے، انگریزی اخبار کا دعویٰ

Shehryar Abbasi شہریار عباسی بدھ اکتوبر 00:28

پاکستان کا فرانس سے سفیر بلانے پر غور، تاہم میں کئی ماہ سے  پیرس میں ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 اکتوبر2020ء) قومی اسمبلی اجلاس میں فرانس سے پاکستانی سفیر کو واپس بلانے کے بیان کے بعد نیا دعویٰ سامنے آیا ہے کہ فرانس میں پاکستان کا کوئی سفیر موجود ہی نہیں ہے ۔ انگریزی اخبار کی رپورٹ کی مطابق گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کے معاملے پر قومی اسمبلی میں مذمتی قرارداد پیش کی گئی، اس موقع پر اسمبلی میں فرانس سے پاکستانی سفیر کو واپس بلانےپر غور کیا گیا۔

اسمبلی میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے بھی فرانس سے سفیر واپس بلانے کے مطالبے کی حمایت کی لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ گزشتہ تین ماہ سے فرانس میں پاکستان کو کوئی سفیر ہے ہی نہیں ۔ انگریزی اخبار کی رپورٹ کے مطابق فرانس میں معین الحق بطور سفیر فرائض سر انجام دے رہے تھے جو کہ تین ماہ قبل چین تبادلہ ہونے کے بعد فرانس چھوڑ چکے ہیں ۔

(جاری ہے)

معین الحق کے تبادلے کے بعد پیرس میں پاکستانی سفارتخانہ سفیر کے بغیر چل رہا ہے ۔

اور وزارت خارجہ نے فرانس میں کوئی سفیر تعینات نہیں کیا تھا۔ رپورٹ کے مطابق پیرس میں پاکستانی سفارتخانے کے ڈپٹی ہیڈ آف مشن محمد امجد عزیز قاضی سفارتخانے کے معاملات دیکھ رہے ہیں، امجد قاضی سفارتخانے کے سینیئر ترین افسر ہیں۔ اس سے قبل وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کے معاملے پر فرانس سے سفیر واپس بلانے پر غورشروع کردیا ہے،حالیہ دہشتگردی کے واقعات میں بھارت ملوث ہوسکتا ہے،کشمیر میں جاری بھارتی ظلم و ستم کے باعث پاکستان بھارت سے مذاکرات نہیں کرسکتا۔

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ فرانس سے اپنے سفیر کو مشاورت کیلئے بلوانا پڑا تو بلائیں گے اور پارلیمنٹ سے رہنمائی لیں گے۔ اس سلسلے میں وزیراعظم عمران خان سے بھی مشاورت کی جائے گی۔