پاکستان اسٹیل ملز سے چار ہزار پانچ سو ملازمین کو فارغ کرنے کے خلاف تحریک التواء سینیٹ سیکریٹریٹ میں جمع کرا دی،سراج الحق

تحریک التواء سینیٹ کے قواعد و ضوابط مجریہ 2012ء کے قاعدہ 85 کے تحت جمع کرائی گئی ہے، امیر جماعت اسلامی پاکستان

پیر نومبر 22:59

پاکستان اسٹیل ملز سے چار ہزار پانچ سو ملازمین کو فارغ کرنے کے خلاف تحریک ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 30 نومبر2020ء) جماعت اسلامی پاکستان کے امیر سینیٹر سراج الحق نے پاکستان اسٹیل ملز سے چار ہزار پانچ سو ملازمین کو فارغ کرنے کے خلاف تحریک التواء سینیٹ سیکریٹریٹ میں جمع کرا دی ہے۔تحریک التواء سینیٹ کے قواعد و ضوابط مجریہ 2012ء کے قاعدہ 85 کے تحت جمع کرائی گئی ہے۔تحریک التواء میں کہا گیا ہے کہ حکومت نے پاکستان سٹیل ملز کے چار ہزار پانچ سو سے زائد ملازمین کو اپنی ملازمتوں سے فارغ کردیا ہے اور اس حوالہ سے باقاعدہ ترجمان پاکستان اسٹیل ملز کی طرف سے برطرفی کی 27 نومبر 2020ء کوپریس ریلیز جاری کی گئی ہے۔

تحریک التواء میں مزید کہا گیا ہے کہ ترجمان پاکستان اسٹیل کی طرف سے جاری کردہ تفصیلات کے مطابق گروپ ii,iii,iv,jo,sکے ملازمین کو فارغ کیا جارہا ہے۔

(جاری ہے)

اور اسی طرح AMاورDMکے ملازمین کوبھی فارغ کیا جارہا ہے۔DCE,SE,DGM,Managersکو فارغ کیا جارہا ہے اور اس حوالہ سے پریس ریلیز کے مطابق ملازمین کی برطرفی کے انفرادی خط تمام ملازمین کو محکمہ ڈاک کی رجسٹرڈ پوسٹ کے ذریعے بھیجے جارہے ہیں۔

تحریک التواء میں وفاقی وزیر حماد اظہر کا اسٹیل مل کے حوالے سے بیان کا بھی حوالہ دیا گیا ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ95 فیصد ملازمین کو فارغ کردیا جائے گا۔سینیٹر سراج الحق نے تحریک التواء میں کہا ہے کہ حکومت کا مذکورہ اقدام ہزاروں خاندانوں کا معاشی قتل اور ان کے لیے انتہائی صدمہ کا پیغام ہے۔تحریک التواء میں انتہائی اہم اور فوری نوعیت کے اس قومی اہمیت کے حامل معاملے کو زیر بحث لانے کے لیے ایوان کی معمول کی کارروائی روکنے کی استدعا کی گئی ہی