وفاقی حکومت کورونا ویکسین خریدنے کی اجازت دے، عذرا پیچوہو

لگ رہاہے ہم آخری ملک ہوں گے جن کے پاس کورونا ویکسین آئے گی،وزیر صحت سندھ

ہفتہ جنوری 17:13

وفاقی حکومت کورونا ویکسین خریدنے کی اجازت دے، عذرا پیچوہو
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 16 جنوری2021ء) وزیر صحت سندھ ڈاکٹر عذرا پیچوہو نے کہا ہے کہ ائرس کے اثرات میں تبدیلی آرہی ہے، وفاقی حکومت کورونا ویکسین خریدنے کی اجازت دے۔انہوں نے کہا کہ لگ رہاہے ہم آخری ملک ہوں گے جن کے پاس کورونا ویکسین آئے گی، وفاقی حکومت سے ویکسین کے حصول کیلئے بارہا باتیں کی ہیں۔عذرا پیچوہو نے کہا کہ وفاق سے بات ہوئی ،ویکسین کہاں سے کس مینوفیکچر سے ،کتنی اور کس ٹائم فریم میں لی جائے گی ، ہمیں کچھ اندازہ نہیں کتنی اور کس ٹائم فریم میں ویکسیں آئے گی۔

عذرا پیچوہو نے کہا کہ یہ بہت ہی مشکل مرحلہ ہے ،ہمیں 70سے 80فیصد افراد کو ویکسین لگانی ہے ،ویکسین کیلئیچین کی حکومت سے بات ہوئی ہے ، لیکن حصول وفاق کا کام ہے بطور صوبہ ہم چین سے براہ راست ویکسین نہیں لے سکتے۔

(جاری ہے)

انہوں نے بتایا کہ چینی ویکسین کے کراچی یونی ورسٹی، انڈس اسپتال اور آغا خان اسپتال میں ٹرائل ہوئے ہیں۔ڈاکٹر عذرا پیچوہو نے کہا کہ یہ وائرس بہت تیزی سے تبدیل ہورہا ہے، ویکسین نجی شعبے سے بھی خرید کر لوگوں کومفت لگانے کے حوالے سے وفاقی حکومت سے بات کروں گی۔

وزیر صحت سندھ نے کہا کہ حکومت لوگوں کو ویکسین مفت میں لگائے گی، ویکسین لگنے کے بعد بھی ماسک پہننا پڑے گا۔انہوں نے کہا کہ چاہتے ہیں ہم اپنے لوگوں کو سب سے پہلے ویکسین فراہم کریں، ویکسین کے باجود ماسک سے چھٹکارا نہیں ملے گا، ویکسین کی وجہ سے وائرس کے مضر اثرات سے بچا جا سکتا ہے۔انہوںنے کہا کہ چینی حکومت کا کہنا ہے کہ ویکسین کے لیے وفاقی حکومت یا وزارت خارجہ کے ذریعے رابطہ کریں، سائنوفارم چین،یواے ای سمیت کئی ممالک میں استعمال ہورہا ہے۔