حکومت کا پیری اربن ہاؤسنگ سکیم کے تحت 14 لاکھ روپے کا سستا گھر مہیا کرنے کا فیصلہ

اپنا گھر ہر خاندان کا خواب ہو تا ہے موجودہ دور میں کم آمدن والے گھرانوں کا سب سے بڑا مسئلہ گھرکا حصول ہے جس کے لیے وہ ساری زندگی محنت کرتے ہیں۔ تحریک انصاف کی قیادت پہلے دن سے کم وسیلہ خاندانوں کے اس مسئلہ کے حل کے لیے کوشاں ہے، وزیر خزانہ پنجاب ہاشم جواں بحت

Danish Ahmad Ansari دانش احمد انصاری پیر 14 جون 2021 18:23

حکومت کا پیری اربن ہاؤسنگ سکیم کے تحت 14 لاکھ روپے کا سستا گھر مہیا کرنے ..
لاہور(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 جون2021ء) حکومت پنجاب نے غریب عوام کیلئے بجٹ میں بڑی خوشخبری سنا دی، حکومت کا پیری اربن ہاؤسنگ سکیم کے تحت 14 لاکھ روپے کا سستا گھر مہیا کرنے کا فیصلہ، اربوں روپے کے فنڈز جاری کر دیے گئے- تفصیلات کے مطابق وزیر خزانہ پنجاب ہاشم جواں بحت کا کہنا ہے کہ پنجاب حکومت آئندہ مالی سال میں " پیری اربن ہاؤسنگ اسکیم' متعارف کروا رہی ہے جس کے تحت اوسطـاًایک گھر 14لاکھ روپے کی قیمت پر میسر ہوگا۔

پنجاب اسمبلی میں بجٹ سیشن سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خزانہ پنجاب ہاشم جواں بحت نے کہا کہ اپنا گھر ہر خاندان کا خواب ہو تا ہے موجودہ دور میں کم آمدن والے گھرانوں کا سب سے بڑا مسئلہ گھرکا حصول ہے جس کے لیے وہ ساری زندگی محنت کرتے ہیں۔ تحریک انصاف کی قیادت پہلے دن سے کم وسیلہ خاندانوں کے اس مسئلہ کے حل کے لیے کوشاں ہے ۔

(جاری ہے)

آج مجھے یہ بتاتے ہوئے خوشی محسوس ہو رہی ہے ۔

وزیر خزانہ پنجاب ہاشم جواں بحت نے کہا کہ ؎ پنجاب حکومت آئندہ مالی سال میں" پیری اربن ہاؤسنگ اسکیم" متعارف کروا رہی ہے جس کے تحت اوسطـاًایک گھر 14لاکھ روپے کی قیمت پر میسر ہوگا ۔اِس منصوبے کے تحت انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ کیلئے 3ارب روپے کے فنڈز مختص کیے گئے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ نیا پاکستان ہائوسنگ پروگرام کے تحت ہم HUD&PHE کے محکمے کو ایک ارب روپے کے فنڈز فراہم کیے جا رہے ہیں جس سے پرائیویٹ ڈویلپرز کے تعاون سے وضع کردہ طریقہ کار کے تحت لوگوں کیلئے گھروں کی تعمیرممکن ہو سکے گی۔

نیا پاکستان اسکیم کے تحت 35,000 اپارٹمنٹس بنائے جائیں گے ۔ اس کے علاوہ پنجاب کے شہروں میں جدید انفراسڑکچر اور شہری سہولیات کی فراہمی کے لئے 22 ارب 44 کروڑ روپے کے فنڈز دئیے جا رہے ہیں۔ وبائی وزیر خزانہ ہاشم جواں بخت نے پنجاب اسمبلی میں بجٹ تقریر میں بتایا کہ آج میں اس مقدس ایوان میں پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کے چوتھے بجٹ اور پنجاب اسمبلی کی نئی عمارت میں پہلی تقریر کا اعزاز حاصل کر رہا ہوں ۔

پنجاب اسمبلی کی اس نئی عمارت کے 16سال سے زیر التواء منصوبے کی تکمیل کا سہرا بلاشبہ جناب اسپیکر آپ کے سر ہے جس کے لیے میں آپ کو قائد ایوان اور تمام اراکین اسمبلی کی جانب سے مبارکباد پیش کرتا ہوں۔ جناب سپیکر ! پنجاب حکومت وزیر اعظم عمران خان اور وزیر اعلیٰ عثمان بزدار کی قیادت میں ملکی تاریخ کے سب سے بڑے مالی بحران اور بد ترین وباء کا مقابلہ کرتے ہوئے معاشی ترقی کی نئی راہوں پر گامزن ہے جس کی منزل عوامی خوشحالی اور صوبے کی یکساں ترقی ہے ۔

پنجاب حکومت کا نئے مالی سال کا بجٹ حقیقی معنوں میں تحریک انصاف کے منشور کے عین مطابق اور عوامی امنگوں کا ترجمان ہے ۔ لیکن اس سے قبل کے میں معزز ایوان کو بجٹ کی تفصیلات سے آگاہ کروں میں انھیں یاد دلانا چاہتا ہوں کہ آج سے تین سال قبل جب پاکستان کی عوام نے وزیر اعظم عمران خان پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے تحریک انصاف کو ووٹ دیا ملک تاریخ کے بد ترین مالی بحران سے دوچار تھا۔ مالی و تجارتی خسارے ،بڑھتے ہوئے گردشی قرضے او ر گرتے ہوئے معاشی اشارئیے(Indicators) سابقہ حکومت کی ناقص پالیسیوںاور ان سے جنم لینے والی بدعنوانیوں کی تصدیق کر رہے تھے۔