افغان طالبان نے رمضان میں جنگ بندی کی اپیل مسترد کردی

مبارک ماہ میں جنگی کارروائیوں میں تیزی لائیںگے، اسلام کے بڑے غزوے رمضان میں ہوئے تھے جس میں جنگ بدر اور فتح مکہ شامل تھے،ترجمان

ہفتہ مئی 18:40

کابل(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ ہفتہ مئی ء) افغان طالبان نے رمضان میں جنگ بندی کی اپیل مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کے جنگجو اس مبارک ماہ میں جنگی کارروائیوں میں تیزی لائیںگے۔ افغان میڈیا نے طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کے حوالے سے کہا ہے کہ اسلام کے بڑے غزوے رمضان میں ہوئے تھے جس میں جنگ بدر اور فتح مکہ شامل تھے۔

(جاری ہے)

یاد رہے کہافغان صدر اشرف غنی، اور امریکی کمانڈر جنرل نکولسن نے اپنے الگ الگ پیغامات میں طالبان نے مبارک مہینے میں جنگ بند کرنے کی اپیل کی تھی ۔ افغانستان میں اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے نمائندے تادامیچی یاماموتونے تمام فریقوں سے رمضان میں جنگ بند کرنے کی اپیل کی تھی۔ تاہم طالبان کے ترجمان نے کہا کہ جس طرح رمضان میں ہر عبادت کا ثواب زیادہ ہوتا ہے اس لئے طالبان رمضان میں جنگی کاروائیاں مزید تیز کرینگے۔ اپریل میں موسم بہار اپریشنز شروع کرنے کے بعد طالبان نے حملے تیز کئے ہیں اور روایتی پشتون اکثریتی علاقوں سے جنگ کو شمال اور مغربی علاقوں تک پہلایاہے۔

Your Thoughts and Comments