ایک کے بعد ایک سازش ہوئی ،ْ کوئی وزیراعظم کو نہیں نکال سکا ،ْ پہلی بار ڈٹ گیا کہ استعفیٰ نہیں دوں گا ،ْ مریم نواز

جب نوازشریف پر غداری کے فتوے لگا رہے تھے، اس ہی دوران اسد درانی کی کتاب آ گئی ،ْاب نیشنل سیکیورٹی کی میٹنگ کیوں نہیں بلائی جاتی اب مشترکہ اعلامیہ کیوں نہیں آتا ناانصافی کے فیصلے کو عوام ووٹ کی طاقت سے ختم کر دیں گے ،ْ ورکرز کنونشن سے خطاب

جمعہ جون 22:59

فیصل آباد (اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ جمعہ جون ء) سابق وزیر اعظم محمد نوازشریف کی صاحبزادی مریم نواز نے کہا ہے کہ ایک کے بعد ایک سازش ہوئیں لیکن کوئی وزیراعظم کو نہیں نکال سکا اور پہلی بار ڈٹ گیا کہ استعفیٰ نہیں دوں گا ،ْجب نوازشریف پر غداری کے فتوے لگا رہے تھے، اس ہی دوران اسد درانی کی کتاب آ گئی۔ اب نیشنل سیکیورٹی کی میٹنگ کیوں نہیں بلائی جاتی اب مشترکہ اعلامیہ کیوں نہیں آتا ناانصافی کے فیصلے کو عوام ووٹ کی طاقت سے ختم کر دیں گے۔

جمعہ کو ڈجکوٹ میں جلسے سے خطاب مرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ انسان جو سازشیں کرتا ہے وہ کامیاب نہیں ہوتیں ،ْنواز شریف کو اقامہ پر نکال دیا تو ظالموں کو پھر بھی چین نہیں آیا ،ْان پر غداری کے مقدمے لگائے گئے تو کبھی مذہب کے حوالے سے فتوے لگوائے گئے۔

(جاری ہے)

جب نوازشریف پر غداری کے فتوے لگا رہے تھے، اس ہی دوران اسد درانی کی کتاب آ گئی۔ اب نیشنل سیکیورٹی کی میٹنگ کیوں نہیں بلائی جاتی اب مشترکہ اعلامیہ کیوں نہیں آتا انہوںنے کہاکہ جانتی ہوں کہ وزیراعظم کو کتنی بار دباؤ کا سامنا رہا کہ استعفیٰ دو اور گھر چلے جاؤ۔

ایک کے بعد دوسری سازش ہوئی لیکن کوئی وزیراعظم کو نہیں نکال سکا۔ پہلی بار وزیراعظم ڈٹ گیا کہ استعفیٰ نہیں دوں گا۔انہوںنے کہاکہ کبھی لاک ڈاؤن تو کبھی ڈان لیکس کی گئی، کبھی دھاندلی کا بہانہ بنا کر کنٹینر لگا کر سازش کی گئی لیکن نواز شریف نے وزارت عظمیٰ کی قربانی دے دی لیکن ووٹ کی حرمت کو گرنے نہیں دیا۔اس ناانصافی کے فیصلے کو عوام ووٹ کی طاقت سے ختم کر دیں گے۔ عوام 25 جولائی کو گھروں سے آندھی اور طوفان کی طرح نکلیں اور جمہوریت پر وار کرنے والوں کا راستہ روکیں۔انہوں نے کہا کہ عوام سازشوں سے گھبرائیں نہیں بلکہ گھروں سے نکلیں اور شیر پر مہر لگا کر سازشوں کو ناکام بنائیں ۔

Your Thoughts and Comments