اُردو پوائنٹ پاکستان کراچیکراچی کی خبریںگورنر ہاؤس میں بیٹھا نہیں رہوں گا ،ہم کراچی کیلئے اپنا کلیدی کردار ..

گورنر ہاؤس میں بیٹھا نہیں رہوں گا ،ہم کراچی کیلئے اپنا کلیدی کردار ادا کرینگے، عمران اسماعیل

, معروف سماجی رہنما حنید لاکھانی کا معروف سماجی تنظیموں کے ساتھ ا سٹریٹ چلڈرن سے متعلق مہم کا باضابطہ آغازکا اعلان

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 اگست2018ء)نامزد گورنرسندھ عمران اسماعیل نے کہا کہ عمران خان ایک نئے پاکستان کا آغاز کررہے ہیں ،ہماری پارٹی نے پہلے ایک سیٹ سے شروع کیا، ہمت نہیں ہاری ،ہمارا حوصلہ بلند تھا اس لیئے آج یہ دن دیکھا جب ہم حکومت بنانے جارہے ہیں۔ ہم کراچی اور سندھ کی ترقی کیلئے اپنا کلیدی کردار ادا کرینگے۔میں گورنر ہاؤس میں بیٹھا نہیں رہوں گا ، بلکہ آپ کے ساتھ کام کرونگا۔

یہ یومِ آزادی نئے پاکستان کی پہلی یومِ آزادی ہے اٹھارہ اگست عمران خان وزیر اعظم کا حلف اٹھائیں گے وہ ایک تاریخی لمحہ ہوگا جس کی پوری قوم منتظر ہے۔۔اقرا یونیورسٹی ملک کی بہترین جامعات میں سے ایک ہے جس پر بانی حنید لاکھانی اور موجودہ وائس چانسلر ڈاکٹر وسیم قاضی دادوتحسین کے مستحق ہیں۔

(خبر جاری ہے)

ان خیالات کااظہار انھوں نے اقرا یونیورسٹی کے زیر اہتمام 71 ویں یوم آزادی کے موقع پر جشن آزادی کی مرکزی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

تقریب کا آغاز صبح ساڑھے نوبجے پرچم کشائی اور قومی ترانے سے ہوا، نامزد گورنر سندھ عمران اسماعیل ،سابق گورنر سندھ لیفٹیننٹ جنرل(ر)معین الدین حیدر ، بانی اقرا یونیورسٹی حنید لاکھانی،چانسلر ارم لاکھانی اوروائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر وسیم قاضی نے پرچم کشائی کی۔معروف سماجی رہنما حنید لاکھانی نے اقرا فاؤنڈیشن کے جبران حیدر،سیلانی ویلفئیرٹرسٹ کے بشیر فاروقی،آزاد فاؤنڈیشن کے نوید حسن اورسیو آورچلڈرن کی شایان ملک کے ہمراہ اسٹریٹ چلڈرن سے متعلق مہم کا باضابطہ آغاز کرتے ہوئے کہا کہ میںیومِ آزادی کے موقع پر اپنے نوجوانوں کو یہ پیغام دینا چاہتا ہوں کہ تعلیم حاصل کریں اور اپنی صلاحیتوں کو وطن عزیز کی ترقی اور قوم کی خوشحالی میں صًرف کریں، تعلیم کے ذریعے ہی ہم ایک ترقی یافتہ ملک بننے کا خواب شرمندہ تعبیر کرسکتے ہیں۔

اقوام متحدہ کی رپورٹ کے مطابق پاکستان میں 15 لاکھ سے زائد بچے سڑکوں پر زندگی کا بیشتر حصہ گزارنے پر مجبور ہیں۔ خیال رہے کہ یہ نتیجہ اب سے 10 برس قبل جمع کردہ اعداد وشمار کی روشنی میں مرتب کیا گیا ہے۔اسڑیٹ چلڈرن ہمارے معاشرے کامحروم ترین اور کمزورترین طبقہ ہے جس کی کوئی آواز نہیں ہم ان کی آواز بنیں گے اور ان کی آواز کو اقتدار کے ایوانوں تک پہنچائیں گے۔

ہم یہ سمجھتے ہیں کہ اسڑیٹ چلڈرن کی کفالت اور تعلیم وتربیت کی ذمہ داری حکومت کی ہے اور ہم اس مہم کے ذریعے حکومت کو اس کی اس اہم ذمہ داری کی طرف متوجہ کرکے حکومت کے ساتھ کام کرینگے۔جناب عمران خان کی قیادت میں نئی حکومت اس ذمہ داری کو اٹھانے میں سنجیدہ ہے اور ہمیں ان سے بیحد مثبت امیدیں وابستہ ہیں۔ہمارے نامزد وزیراعظم جناب عمران خان خود ایک نامور سماجی رہنما ہیں اورمعاشرے اور انسانیت کا درد رکھتے ہیں۔

ہمیں آج یہ سوچنا ہوگا کہ ہم سے کہاں غلطی ہوئی،معاشرہ برے لوگوں سے خراب نہیں ہوتا بلکہ اچھے لوگوں کے کسی بھی غلط کام پر خاموشی اختیار کرنے سے ہوتا ہے، اور یہی ہمارے ملک کا المیہ ہے۔اب وہ وقت آن پہنچا ہے جب ہم مزید خاموش نہیں رہ سکتے،ہمیں یہ خاموشی توڑنی ہوگی اور آواز اٹھانی ہوگی۔مجھے یقین ہے کہ آپ جیسے روشن ذہن اگر یہ آواز بلند کرینگے تو یہ طاقت کے ایوانوں کے درودیوار ہلادیگی اوروہ دن دور نہیں جب ایک نئے پاکستان کا سورج طلوع ہوگا جہاں کوئی بچہ سڑک پر نہ ہوگا بلکہ اسکول جاتا ہوگا،بہترین ہنر کے ساتھ اعلیٰ تعلیم حاصل کرکے ملک کا ایک کارآمد شہری بن کر ابھرے گا۔

آئیں ہمارے اس مشن میں ہمارا ساتھ دیں اور اس ملک کو ایک عظیم فلاحی ریاست بنانے میں اپنا کردار ادا کریں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

کراچی شہر کی مزید خبریں