سابق پروفیشنل کھلاڑی نک لینڈل کے میچ فکسنگ میں ملوث ہونیکے انکشاف کے بعد ٹینس میں فکسنگ پر نئے سوالات اٹھا دئیے

پیر جنوری 22:19

سابق پروفیشنل کھلاڑی نک لینڈل کے میچ فکسنگ میں ملوث ہونیکے انکشاف کے ..

سڈنی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔25 جنوری۔2016ء) آسٹریلیا کے سابق پروفیشنل ٹینس کھلاڑی کے میچ فکسنگ میں ملوث ہونے کے انکشاف کے بعد ٹینس میں فکسنگ پر نئے سوالات اٹھا دیے ہیں۔آسٹریلیا کے سابق کھلاڑی نک لینڈل کو سڈنی کی ایک عدالت نے 2013 کے ٹورنامنٹ میں معمولی فکسنگ کے جرم میں ملوث قرار دیا تھا یہ فیصلہ پیر کو اس وقت سامنے آیا تھا جب کچھ گھنٹے قبل عالمی بک میکر کو آسٹریلین اوپن کے ایک خاص میچ میں جواکھیلنے کے شبہے میں معطل کردیا گیا۔

پراسیکیوٹر نے عدالت میں کہا کہ ستمبر 2013 میں لینڈل کو قصداَ میچ ہارنے کی پیش کش کی گئی جس کی اطلاع ایک ساتھی کو دی گئی، عدالت میں پولیس کی جانب ٹیلی فون کال پر مشتمل مواد بھی پیش کیا گیا۔ لینڈل کو ایک سال قبل فکسنگ کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا، انھیں جرم کے ثابت ہونے پر 10 سال قید کا سامنا ہے اور 15 اپریل کو انھیں باقاعدہ سزا سنائی جائے گی۔

(جاری ہے)

جوئے پر نظر رکھنے والی تنظیم اسپورٹس بیٹ نے بھی ٹینس میں سنگین میچ فکسنگ کا انکشاف کیا تھا۔امریکی اخبار نیویارک ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق مکسڈ ڈبلز مقابلوں میں چیک کھلاڑی اینڈریا ہلاویکوا اور پولینڈ کے لوکاز کبوٹ کے خلاف اسپین کی خاتون کھلاڑی لارا اروابارینا اور ڈیوڈ مریرو کی جیت کے لیے بھاری رقم استعمال کی گئی۔واضح رہے آسٹریلین اوپن ٹینس ٹورنامنٹ کے آغاز سے قبل ہی ٹینس میں میچ فکسنگ کا انکشاف ہوا تھا اور عالمی نمبر ایک سربیا کے نوواک جوکووچ نے2007 میں میچ ہارنے کے عوض بھاری رقم ادا کرنے کی پیش کش کو رد کرنے کا بھی اعتراف کیا تھا۔

ٹینس حکام نے بھی اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ مشتبہ سرگرمیاں اس طرف اشارہ کررہی ہیں لیکن یہ میچ فکسنگ کو ثابت کرنے کے لیے کافی نہیں ۔دوسری جانب ٹینس حکام نے بی بی سی اور بزفیڈ نیوز کی اس رپورٹ کو بھی مسترد کیا تھا جس میں ٹینس میں فکسنگ کا انکشاف کیا گیا تھا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 25/01/2016 - 22:19:36

متعلقہ عنوان :

Your Thoughts and Comments