میری بہن نگینہ خان نے سینیٹ الیکشن میں 8 کروڑ روپے میں ووٹ فروخت کیا

پی ٹی آئی کے 14 ممبران اسمبلی نے ووٹ فروخت کیے، میں نے خود عمران خان اور پرویز خٹک سے ملاقات کرکے ان کو مطلع کیا، ضلع ملاکنڈ میں میری بہن نگینہ خان نے بھی محکمہ پبلک ہیلتھ میں بھرتیوں پر پیسے وصول کیے، تحریک انصاف کی خاتون ایم پی اے کے بھائی آیان خان کے انکشافات

muhammad ali محمد علی منگل اپریل 21:08

میری بہن نگینہ خان نے سینیٹ الیکشن میں 8 کروڑ روپے میں ووٹ فروخت کیا
پشاور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 اپریل2018ء) پاکستان تحریک انصاف کی رکن صوبائی اسمبلی نگینہ خان کے بھائی آیان خان نے کہا ہے کہ عمران خان کوتبدیلی کے نام پر عوام نے ووٹ دیکر اقتدار کے ایوانوں تک پہنچایا لیکن ان کے دعوے سراسر غلط ثابت ہوئے کیونکہ صوبائی حکومت میں شامل وزراء اور ارکان میں سے زیادہ تر کرپشن میں ملوث ہیں۔ منگل کو چکدرہ پریس کلب لوئر دیر میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انھوں نے دعویٰ کیا کہ ان کی بہن نگینہ خان ایم پی اے نے سینیٹ کے حالیہ الیکشن میں اپنا ووٹ8 کروڑ روپے میں فروخت کر کے پارٹی کو نقصان پہنچا یا۔

انھوں نے کہا کہ سینیٹ انتخابات سے چندروز قبل میں نے خود عمران خان اور صوبائی وزیر اعلیٰ پرویز خٹک سے ملاقات کی اور ان کو مطلع کیا کہ میری بہن سمیت دیگر ارکان بھی سینیٹ کے الیکشن میں اپنا ووٹ فروخت کر نے والے ہیں لیکن انھوں نے میری بات پر یقین نہیں کیا۔

(جاری ہے)

آیان خان نے کہاکہ اب ثابت ہوگیا ہے کہ میری بہن سمیت پی ٹی آئی کے 14 ممبران اسمبلی نے ووٹ فروخت کیے ہیں۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ پی ٹی آئی کے ممبران اسمبلی کرپشن میں ملوث ہیںاور نوکریاں بھی فروخت کر رہے ہیں، ضلع ملاکنڈ میں میری بہن نگینہ خان نے بھی محکمہ پبلک ہیلتھ میں بھرتیوں پر پیسے وصول کیے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ چیف جسٹس سپریم کورٹ صوبہ میں جاری بے قاعدگیوں اور انتظامی افسران کی کرپشن کے خلاف کارروائی کے لیے اقدامات کریں۔