پاکستان چین کے ساتھ فلم، میڈیا، ثقافت اور ورثہ کے شعبوں میں تعاون کو وسعت دینا چاہتا ہے، چینی صدر

شی جن پنگ کا ون بیلٹ ون روڈ انشی ایٹو ثقافتی رابطوں کے قیام میں معاون ثابت ہو گا اور اس سے دونوں ممالک کے علاوہ پورے خطہ کے لوگوں کو فائدہ ہو گا، پاکستان اپنی متنوع ثقافت، کثیر النسلی اور کثیر اللسانی معاشرے کے ساتھ ثقافت اور سیاحت کے شعبہ میں تعاون کے بے پناہ مواقع فراہم کرتا ہے۔ پاکستان فنکاروں، فلم، ٹی وی ڈراموں و سیریلز اور فنون و دستکاریوں کے مسلسل تبادلے کے ذریعے سی پیک کو ثقافتی راہداری میں تبدیل کرنے کا خواہاں ہے وزیر مملکت اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب کی چینی سفیر یائو جنگ سے ملاقات میں بات چیت

منگل اپریل 23:34

پاکستان چین کے ساتھ فلم، میڈیا، ثقافت اور ورثہ کے شعبوں میں تعاون کو ..
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 اپریل2018ء) وزیر مملکت برائے اطلاعات، نشریات، قومی تاریخ و ادبی ورثہ مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ پاکستان چین کے ساتھ فلم، میڈیا، ثقافت اور ورثہ کے شعبوں میں تعاون کو وسعت دینا چاہتا ہے، چینی صدر شی جن پنگ کا ون بیلٹ ون روڈ انشی ایٹو ثقافتی رابطوں کے قیام میں معاون ثابت ہو گا اور اس سے دونوں ممالک کے علاوہ پورے خطہ کے لوگوں کو فائدہ ہو گا۔

وہ منگل کو پاکستان میں چین کے سفیر یائو جنگ سے ملاقات میں بات چیت کر رہی تھیں۔ وزیر مملکت نے کہا کہ پاکستان ہر آزمائش پر پورا اترنے والے اپنے دوست چین کے ساتھ منفرد تعلقات کی بڑی قدر کرتا ہے، دونوں ممالک کے درمیان تعاون کی ایک تاریخ ہے جس کی بنیاد ان کے آبائو اجداد نے رکھی۔

(جاری ہے)

وزیر مملکت نے کہا کہ اقتصادی تعاون کے استحکام کیلئے ایک دوسرے کی ثقافت، اقدار اور ورثہ کو سمجھنا نہایت ضروری ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان اپنی متنوع ثقافت، کثیر النسلی اور کثیر اللسانی معاشرے کے ساتھ ثقافت اور سیاحت کے شعبہ میں تعاون کے بے پناہ مواقع فراہم کرتا ہے۔ پاکستان فنکاروں، فلم، ٹی وی ڈراموں و سیریلز اور فنون و دستکاریوں کے مسلسل تبادلے کے ذریعے سی پیک کو ثقافتی راہداری میں تبدیل کرنے کا خواہاں ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور چین کی حکومتوں کے درمیان ثقافتی معاہدے پر دستخط کرنے کے انتظامی پروگرام سے بالخصوص ثقافتی تبادلوں و تعاون کے شعبہ میں اختراع و ایجادات کیلئے متعدد مراعات میسر آ سکیں گی۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے ملک کی پہلی فلم پالیسی کا اعلان کیا ہے جس کا مقصد سنیما کی زوال پذیر صنعت کو بحال کرنا ہے، پاکستان نے فلم کے شعبہ میں چینی ماڈل سے بہت کچھ سیکھا ہے اور فلم، پروڈکشن و براڈ کاسٹ کے شعبوں میں تعاون کو مزید بڑھانے اور مشترکہ منصوبے شروع کرنے کا خواہاں ہے۔ ملاقات میں بالخصوص وزیر مملکت کے حالیہ دورہ چین اور انتظامی ثقافتی پروگرام کے تناظر میں میڈیا، اطلاعات اور ثقافت کے شعبہ میں تعاون پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیر مملکت نے چینی سفیر کو بتایا کہ دو پاکستانی فلمیں جلد چینی سینما میں دکھائی جائیں گی اور امید ہے کہ فلموں کے تبادلہ سے دونوں ممالک کے عوام کو ایک دوسرے کی ثقافت اور اقدار کو سمجھنے میں مدد ملے گی۔ چینی سفیر نے چین کے ساتھ دوطرفہ تعلقات بالخصوص فلم اور ثقافت کے شعبہ میں تعاون کو مضبوط بنانے اور مزید فروغ دینے کے حوالہ سے وزیر مملکت کی کوششوں کو سراہا۔ وزیر مملکت نے پاکستان کی فلم انڈسٹری کی بحالی کے سلسلہ میں چین کی جانب سے تعاون میں دلچسپی کی تعریف کی۔