نار کو ٹکس کنٹرو ل ونگ کو فعا ل بنا نے کیلئے تما م اقدا ما ت کئے جا ئیں،مکیش کما ر چا لہ

جمعرات اپریل 17:27

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 اپریل2018ء) صو با ئی وزیر ایکسا ئز اینڈ ٹیکسیشن و انسدا د منشیا ت مکیش کما ر چا لہ نے کہا ہے کہ نا ر کو ٹکس کنٹرو ل ونگ کا قیا م افسرا ن کیلئے ایک چیلنج کی حیثیت رکھتا ہے اور ہم سب کو ایک ٹیم کے طو ر پر کا م کر تے ہو ئے اس کو کامیا ب بنا نا ہے ۔یہ با ت آج انہو ں نے اپنے دفتر میں ایک اجلا س کی صدا ر ت کر تے ہو ئے کہی ۔

اجلا س میں سیکریٹری ایکسا ئز اینڈ ٹیکسیشن و انسدا د منشیا ت عبدالحلیم شیخ ،ڈائریکٹر جنر ل نا ر کو ٹکس شعیب احمد صدیقی ،ڈائریکٹر نارکوٹکس کرا چی اقبا ل احمد لغا ر ی ،ڈائریکٹر نا ر کو ٹکس کنٹرو ل حیدرآا د ،میر پو ر خا ص اور شہید بے نظیر آبا اورنگزیب زیب اکبر پہنور اور ڈائریکٹر نا ر کو ٹکس کنٹرو ل سکھر اور لا ڑ کا نہ ذو الفقا ر علی شا ہا نی نے بھی شر کت کی ۔

(جاری ہے)

اجلا س میں نا ر کو ٹکس ونگ کو فعال بنا نے کیلئے اس کے قا نو نی انتظا می اور ما لی معا ملا ت کو بھی زیر بحث لا یا گیا ۔اجلا س میں نیب سے سینئر تین ڈپٹی ڈائریکٹر ز پر مشتمل ایک کمیٹی تشکیل دینے کا بھی فیصلہ کیا گیا جو دیئے گئے اہدا ف کو مکمل کر نے کی ذمہ دا ر ی سو نپی جا ئے گی ۔صو با ئی وزیر مکیش کما ر چا ولہ نے اجلا س سے خطا ب کر تے ہو ئے کہا کہ منشیا ت کی رو ک تھا م سے متعلق قوا نین سے آگہی مہیا کر نے کیلئے افسرا ن و عملے کی جدید خطو ط پر تربیت کی ضرورت ہے او ر دو ر حا ضر کے مطا بق نا ر کو ٹکس ونگ کے عملے کو جدید ہتھیا ر اور گا ڑیا ں مہیا کر نے کی بھی ضرورت ہے ۔

انہو ں نے مزید کہا کہ جب تک ہم نا ر کو ٹکس ونگ کے عملے کو جدید تقا ضو ں کے مطا بق ہم آہنگ نہیں کر یں گے اس وقت تک ہم بھر پو ر کا میا بی حا صل نہیں کر سکتے ۔اجلا س میں نا ر کو ٹکس کنٹرو ل ونگ کے عملے کیلئے علیحدہ یو نیفا ر م مقرر کر نے کی بھی تجویز پر غو ر کیا گیا ۔ڈائریکٹر جنر نا ر کو ٹکس کنٹرو ل شعیب احمد صدیقی نے اجلا س کو بتا یا کہ نا ر کو ٹکس کنٹرول ونگ کو فعال کر نے کیلئے تما م ضروری اقدا ما ت کئے جا رہے ہیں اورا س کو ہر صو ر ت جدید تقا ضو ں سے ہم آہنگ کیا جا ئے ۔صو با ئی وزیر برا ئے ایکسا ئز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات مکیش کمار چالہ نے نارکو ٹکس کنٹرول ونگ کو موثر بنانے کے لے اٹھائے جانے والے اقدامات پر اپنے اطمینان کا اظہار کیا۔

متعلقہ عنوان :