بیٹے کی خواہش، 45 سالہ مرد نے نوجوان لڑکی کو اغواء کرکے شادی کرلی

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین منگل اپریل 14:31

بیٹے کی خواہش، 45 سالہ مرد نے نوجوان لڑکی کو اغواء کرکے شادی کرلی
بھارت (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 24 اپریل 2018ء) : بھارت میں بیٹے کی خواہش نے ایک 45 سالہ شخص کو جیل کی سیر کروادی۔ بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق 45 سالہ اسکول ٹیچر ظلا پرساد نے بیٹے کی خواہش میں 19 سالہ نوجوان لڑکی کو اغوا کیا اور اس سے زبردستی شادی کر لی۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ 45 سالہ اسکول ٹیچر کی اپنی 14 سالہ بیٹی ہے جو اس کی پہلی بیوی میں سے ہے۔

14 سال گزر جانے پر اس کے دل میں بیٹا پیدا کرنے کی خواہش جاگی جس کے لیے اس نے 19 سالہ نوجوان لڑکی کو اغوا کر کے زبردستی اس سے شادی کر لی۔ 19 سالہ لڑکی نے بتایا کہ اس کے والدین نے بھی اپنے قرضے اُتارنے کے لیے اس کی شادی کروادی۔اس شکایت پر پولیس نے 45 سالہ اسکول ٹیچر، نوجوان لڑکی کے والدین اور 45 سالہ شخص کی پہلی بیوی سمیت دیگر کو گرفتار کر لیا۔

(جاری ہے)

متاثرہ لڑکی نے پولیس کو شکایت کرنے کے لیے کسی طرح اپنے 45 سالہ شوہر کو فون استعمال کیا اور ایک پیغام ریکارڈ کر کے مقامی پولیس کو بھیج دیا جس میں اس نے اپنی زبردستی شادی کا تذکرہ بھی کیا۔ اس پیغام پر پولیس نے کارروائی کی اور متاثرہ لڑکی کو بازیاب کروا لیا۔ قبل ازیں 10 اپریل کو متاثریہ لڑکی اپنے والدین کے گھر گئی لیکن انہوں نے اپنی بیٹی کی حمایت کرنے کی بجائے اسے واپس جانے کا کہا جس کے بعد 20 اپریل کو متاثرہ لڑکی نےپولیس کو اطلاع دے دی۔

پولیس نے بتایا کہ بیٹے کی خواہش میں 45 سالہ شخص اور اس کے اہل خانہ اس کی دوسری شادی کے خواہشمند تھے اور 19 سالہ لڑکی سے دوسری شادی کے عوض میں ملزم نے لڑکی کے والدین کو گھر بنانے کی مد میں لیا گیا قرض اُتارنے کے لیے 5 لاکھ روپے دینے کی پیشکش کی ۔