فیصل آباد میں سائنس ایجوکیشن کلچر کوحقیقی معنوں میں پروان چڑھانے کیلئے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فورم تشکیل دینے کا اعلان

پیر مئی 15:08

فیصل آباد۔7 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 مئی2018ء) ڈپٹی کمشنر فیصل آباد سلمان غنی نے اعلان کیا ہے کہ سائنس ایجوکیشن کلچر کوحقیقی معنوں میں پروان چڑھانے کیلئے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فورم فیصل آباد تشکیل دیا جائے گا جس کے ذریعے سکول‘ کالج اوریونیورسٹی سطح پرسائنسی تحقیق و آئیڈیاز کی حوصلہ افزائی کی جائے گی تاکہ سماجی وقومی ترقی اورانسانی آسائش کیلئے جدید ترین ایجادات سامنے آسکیں۔

انہوں نے یہ اعلان ایکسپو سنٹر زرعی یونیورسٹی میں ضلعی انتظامیہ،ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی اور الف اعلان کے اشتراک سے دوروزہ فیصل آباد سائنس میلہ کے میگا ایونٹ کے اختتام پراقبال آڈیٹوریم میں سیمیناراورتقسیم انعامات کی تقریب میں بطور مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا جس میں وائس چانسلرزرعی یونیورسٹی پروفیسرڈاکٹر محمد اقبال ظفر‘ وائس چانسلرجی سی یونیورسٹی ڈاکٹر محمد علی شاہ‘ صدر ایوان صنعت و تجارت شبیر حسین چاولہ‘ڈائریکٹر کالجز ڈاکٹر محمدعالم،ڈین کلیہ زرعی انجینئرنگ ڈاکٹر اللہ بخش نون‘ ڈین فوڈ نیوٹریشن و ہوم سائنس ڈاکٹر مسعود صادق بٹ‘سی ای او ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی رانا شبیر حسین‘ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل خالد مسعود فروکہ ،ایڈیشنل کمشنر مہر شفقت اللہ مشتاق‘ پرائیویٹ سکولز الائنس کے صداقت لودھی ‘ سرکاری وپرائیویٹ سکولز‘ کالجز اور یونیورسٹیوں کے سربراہان و نمائندگان اور سائنس میلہ میں پراجیکٹس سجانے والے طلباء وطالبات بھی موجود تھے۔

(جاری ہے)

ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ ہرچند فیصل آباد صنعت و حرفت‘ فنون لطیفہ اور قومی معیشت کی رگوں میں تازہ خون فراہم کرنیوالا ملک کا دوسرا بڑا شہر ہے تاہم فیصل آباد کے تعلیمی و سائنسی اداروں کو ایک پلیٹ فارم پر لاکر فیصل آباد سائنس و ٹیکنالوجی فورم تشکیل دینا وقت کا تقاضا ہے تاکہ مستقبل میں ایسے مفید پروگرام اسی کی توسط سے منعقد کئے جا سکیں۔

انہوں نے سائنس میلہ کے کامیاب انعقاد پر منتظمین کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے بتایا کہ میلہ کے ذریعے مقرر کئے گئے مقاصد و اہداف حاصل کر لئے گئے ہیں اور آئندہ جدید موضوعات و احتراعات کے تھیم اور بھرپور تیاری کے ساتھ سال کے آخر میں سائنس میلے کوبہتر حکمت عملی کے ساتھ پھر سے منعقد کیا جائے گاتاکہ مستقبل میں اسے شہر کی تعلیمی حلقوں میں ایک خوبصورت روایت سے تعبیر کیا جا سکے۔

انہوں نے کہاکہ آرٹس کے مقابلہ میں سائنسی علوم،مشاہدے‘ تحقیق اور مفروضے پر بنیادپاتے ہیں اور سائنس کے طالب علم ہمیشہ اس کھوج میں رہتے ہیں کہ ذہن یا مشاہدے میں آنے والی کسی بھی چیز کی تصدیق کس طرح کی جائے۔ وائس چانسلرزرعی یونیورسٹی پروفیسرڈاکٹر محمد اقبال ظفر نے کہا کہ یونیورسٹی کے تمام وسائل عوام کی امانت ہیںاور سائنسی میلہ کے انعقاد سمیت نچلی سطح پر سائنسی تعلیم کی ترویج کیلئے ان کے اساتذہ اور لیب سہولیات بھی ہمہ وقت دستیاب ہیں۔

انہوں نے کہا کہ نیوٹریشن اور بچوں کی عقل و صلاحیت کا بڑا گہرا تعلق ہے اسی سلسلہ میں یونیورسٹی کی کلیہ فوڈ سائنس کی ٹیم نے ضلع کے 200اساتذہ کوبچوں کی نیوٹریشن ضروریات کے حوالے سے ضروری تربیت فراہم کی ہے تاہم اس منصوبے کوضلعی انتظامیہ کی سپورٹ سے مزیدآگے بڑھایا جاسکتا ہے۔انہوں نے انڈسٹری سے وابستہ ذمہ داران پر زور دیا کہ سائنس میلہ کی طرز کے پروگرامز کی بھرپور انداز میںمعاونت کریں اور بزنس آئیڈیاز کوعملی شکل میں لانے کیلئے نوجوانوں کی مدد کریں تاکہ مل جل کر ملک کو ترقی سے ہمکنار کرنے کی راہ ہموار ہو۔

گورنمنٹ کالج یونیورسٹی فیصل آباد کے وائس چانسلرڈاکٹر محمد علی شاہ نے سائنس میلہ کے آئیڈیا کو سراہتے ہوئے کہا کہ پاکستان دنیا کا خوبصورت ترین ملک‘ باصلاحیت اور محنت افراداور اللہ تعالیٰ کی فیاضیوں کا حامل ایسا نادرخطہ ہے جس کے نوجوانوں کواگر تعلیم‘ ہنر اور آگے بڑھنے کی اُمید اورمواقع فراہم کر دئیے جائیں تو یہ تھوڑے ہی عرصہ میں محیرالعقول تخلیقات کرکے دنیا کو ورطہ حیرت میں مبتلا کر سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سکول ایجوکیشن میں ایسی اصلاحات متعارف کروائی جائیں کہ اساتذہ اور بچے مکمل یکسوئی کے ساتھ درس و تدریس کے سلسلے کو مزید توانائیوں سے آگے بڑھاسکیں۔انہوں نے اُمید ظاہر کی کہ وہ آج کے نوجوانوں میں جو اُمنگ‘ صلاحیت اور مسابقتی رجحان دیکھ رہے ہیں وہ ملک کے شاندار مستقبل کا پیش خیمہ ہیںاور وہ دن دور نہیں جب ہم سب ترقی یافتہ پاکستان پر فخر کرنیوالے باشندے کہلائیں گے۔

ایوان صنعت وتجارت فیصل آبادکے صدر شبیر حسین چاولہ نے کہا کہ یورپ اور برطانیہ میں ہنر مند افرادی قوت کا بحران سامنے آ رہا ہے اور پاکستان اس حوالے سے خوش نصیب ملک ہے کہ جس کی آدھی سے زائد آبادی نوجوانوں پر مشتمل ہے جو اپنی صلاحیتوں کی بنیاد پر یورپی مارکیٹ میں اپنی جگہ بنا سکتی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمیں شاٹ کٹ کی بجائے اہداف کا تعین کرکے جہد مسلسل سے آگے بڑھتے ہوئے اپنی جگہ بنانی ہے جس کیلئے آج کے نوجوان ہمارا ہراول دستہ ثابت ہوسکتے ہیں۔

سائنس میلہ میں 250سے زائد سٹالز کے ذریعے سکول‘ کالج اور یونیورسٹی سطح کے 600طلباء وطالبات نے اپنے سائنسی آئیڈیازکو نمائش کیلئے پیش کیا۔ اختتامی تقریب کی نقابت ایڈیشنل کمشنر جنرل خالد مسعود فروکہ نے کی۔ اس موقع پر سائنس میلہ میں شریک ہونے والے پرائیویٹ اور گورنمنٹ سکولز‘ کالجز اور یونیورسٹیوںکے بہترین سٹالز کوانعامات ‘ سرٹیفکیٹس اور شیلڈز سے بھی نوازا گیا۔