سیشن عدالت نے عمران خان کے خلاف ہتک عزت کے دعویٰ پر وکیل کو بحث کرنے کا آخری موقع دے دیا ، کارروائی12 جون تک ملتوی

جمعرات مئی 18:41

لاہور۔24 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 مئی2018ء) لاہور کی سیشن عدالت نے وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کی طرف سے پی ٹی آئی کے چیئر مین عمران خان کے خلاف ہتک عزت کے دعویٰ پر وکیل کو بحث کرنے کا آخری موقع دیتے ہوئے کارروائی12 جون تک ملتوی کردی۔ عدالت نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ اگر آئندہ سماعت پر بحث نہ کی گی تو قانون کے مطابق فیصلہ سنایا جائے گا۔

ایڈیشنل سیشن جج لاہور ممتاز انجم نے شہبازشریف کی درخواست پر سماعت کی۔ عدالت کے روبرو عمران خان کے وکیل ڈاکٹربابر اعوان پیش نہ ہوئے جس پر عدالت نے واضح کیا کہ اگر بابر اعوان پیش نہیں ہورہے تو درخواست کا قانون کے مطابق فیصلہ کردیتے ہیں۔ بابر اعوان کے جو نیئر وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ بابر اعوان اسلام آباد میں مصروف ہیں۔

(جاری ہے)

آئندہ سماعت پر بابر اعوان سیشن کورٹ میں پیش ہو کر بحث مکمل کردیں گے، عدالت آج کی مہلت فراہم کرے۔

جس پر عدالت نے بابر اعوان کے جو نیئر وکیل کی استدعا کو منظور کرتے ہوئے کہا کہ اگر آئندہ سماعت پر بحث نہ کی گی تو قانون کے مطابق فیصلہ سنایا جائے گا۔ شہبازشریف کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ عمران خان عدالتی کارروائی کے دوران مسلسل تاخیر ی حربے استعمال کررہے ہیں، قانون کے مطابق ہتک عزت کے دعویٰ کا فیصلہ نوے روز میں ہو جانا چاہیے، عدالت عمران خان کے خلاف دس ارب روپے کے ہرجانہ کے دعویٰ کا جلد فیصلہ کرے۔ عدالت نے کیس کی مزیدسماعت 12 جون تک ملتوی کردی۔ شہباز شریف نے پانامہ لیکس پر دس ارب رشوت کی پیشکش کے بیان پر عمران خان کے خلاف دعوی ٰدائر کر رکھا ہے۔