نہ ذاتی گاڑی ہے اور نہ ہی ملک یا بیرون ملک میں کاروبار ہے ،ْ عمران خان کے اثاثوں اور ٹیکس گوشواروں کی تفصیلات

پی ٹی آئی سربراہ 168 ایکڑزرعی زمین کے مالک ہیں،پاکستان میں مختلف مقامات پر 14 جائیدادیں ہیں ،ْرپورٹ

بدھ جون 19:20

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 جون2018ء) پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کی طرف سے الیکشن کمیشن میں جمع کرائی گئی اثاثوں اور ٹیکس ریٹرن کی تفصیلات سامنے آگئیں۔دستاویزات کے مطابق عمران خان نے گزشتہ سال47 لاکھ 76ہزار611روپے آمدن ظاہر کی۔ذرائع آمدن زراعت،تنخواہ اوربینک منافع ظاہرکیا۔دستاویزات کے مطابق عمران خان نے اپنی آمدن پر 1 لاکھ 3 ہزار 763 روپے ٹیکس ادا کیا۔

پی ٹی آئی سربراہ 168 ایکڑزرعی زمین کے مالک ہیں،کاغذات نامزدگی میں ظاہر کیے گئے اثاثوں کے مطابق عمران خان کو گزشتہ سال زرعی زمین پر 23 لاکھ 60 ہزار آمدن ہوئی اور انہوں نے 18 لاکھ 991 روپے تنخواہ بھی وصول کی۔ دستاویزات کے مطابق پاکستان میں مختلف مقامات پر 14 جائیدادیں ہیں۔بیرون ملک کوئی جائیداد نہیں ،،پاکستان اور بیرون ملک میں کوئی کاروبار بھی نہیں۔

(جاری ہے)

عمران خان نے غیر ملکی دوروں کی تفصیلات بھی کاغذات نامزدگی میں ظاہر کی ہیں، عمران خان نے 2015 سے 2018 کے دوران 28 غیر ملکی دورے کیے جن میں سے زیادہ تر دورے اسپانسرڈ ہیں۔ اس کے علاوہ عمران خان نے کاغذات نامزدگی میں اہلیہ بشریٰ بی بی اور دونوں بیٹوں کو زیر کفالت ظاہر کیا ،ْ اہلیہ اور بچوں کے نام پر کوئی اثاثہ نہیں۔دستاویزات کے مطابق عمران خان کے پاس کوئی ذاتی گاڑی اور زیورات نہیں جب کہ ان کے زیر استعمال فرنیچر سمیت دیگر اشیا کی مالیت 5 لاکھ روپے ہے۔ اس کے علاوہ عمران خان کے اسلام آباد میں 2 فارن کرنسی اکاؤنٹ ہیں جس میں سے ایک اکاؤنٹ میں 3 لاکھ 78 ہزار 760 ڈالر اور دوسرے میں 1470 ڈالر ہیں۔