حیدرآباد،پیپلز پارٹی کے گذشتہ دور حکومت میں جو سیاسی بھرتیاں کی گئیں،روشن سندر چانڈیو ایڈوکیٹ

پیپلز پارٹی کے دور حکومت میں تعینات کئے گئے سرکاری افسران کو ہٹا کر فوری طور پر ایماندار افسران تعینات کیئے جائیں، زرداری اور نواز شریف کی غلط پالیسیوں کے سبب آج ہر پاکستانی ایک لاکھ 70ہزار روپے کا مقروض ہے ،مہنگائی عروج پر ہے اور عوام کو پینے کا صاف پانی بھی میسر نہیں ہے،حلقہ پی ایس 62سے آزاد حیثیت میں الیکشن لڑنے والے امیدوار کی پریس کانفرنس

بدھ جون 23:09

حیدرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 جون2018ء) حیدرآبادکے صوبائی اسمبلی کے حلقہ پی ایس 62سے آزاد حیثیت میں الیکشن لڑنے والے امیدوار روشن سندر چانڈیو ایڈوکیٹ نے حیدرآباد پریس کلب میں پریس کا نفرنس کرتے ہوئے الیکشن کمیشن آف پاکستان سے اپیل کی کہ پیپلز پارٹی کے دور حکومت میں تعینات کئے گئے سرکاری افسران ،سرکاری وکیل اور سرکاری جیالوں کو فوری طور پر ہٹا کر ان کی جگہوں پر ایماندار افسران تعینات کئے جائیں تاکہ انتخابات کے عمل کو صاف و شفاف بنایا جاسکے ۔

انہوں نے کہاکہ پیپلز پارٹی کے گذشتہ دور حکومت میں جو سیاسی بھرتیاں کی گئیں اور حیدرآباد سمیت پورے سندھ میں جو مختیار کار،،اسسٹنٹ مختیار کار اورتپیدار جن کی تعداد 800کے قریب ہے الیکشن کمیشن آف پاکستان انہیں فوری طور ہٹائے اور ایس ایچ اوز کو ضلع بدر کیا جائے ،انہوں نے مزید کہاکہ زرداری اور نواز شریف کی غلط پالیسیوں کے سبب آج ہر پاکستانی ایک لاکھ 70ہزار روپے کا مقروض ہے ،،مہنگائی عروج پر ہے اور عوام کو پینے کا صاف پانی بھی میسر نہیں ہے جبکہ آبادگار طبقہ سخت پریشان ہے اور انہیں اپنی فصل کی مناسب قیمت بھی نہیں مل رہی ہے ،،پانی نہ ملنے کے سبب سندھ کی زراعت تباہ ہوچکی ہے ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا ہے کہ اگر 2018ء کے عام انتخابات میں عوام نے دوبارہ وڈیروں،جاگیرداروں اور سرمایہ داروں کو ووٹ دیا تو ملک کبھی بھی ترقی نہیں کر سکتا اس لئے ضروری ہے کہ ایماندار اور اچھی ساکھ رکھنے والے لوگوں کو ووٹ دیا جائے ۔