امریکی سرمایہ کاروں کو پاکستان کے دورے کی دعوت،

ویزے آسان بنانے کی کوشش جاری ہے امریکا میں پاکستان کے سفیر علی جہانگیر صدیقی کی ایف پی سی سی آئی کے صدر غضنفر بلور سے بات چیت

بدھ ستمبر 12:56

امریکی سرمایہ کاروں کو پاکستان کے دورے کی دعوت،
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 ستمبر2018ء) امریکا میں پاکستان کے سفیر علی جہانگیر صدیقی نے دی پاکستان فیڈریشن آف کامرس اینڈ انڈسٹری (ایف پی سی سی آئی) کے وفدکے دورہ امریکا کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے دونوں ملکوں کے مابین تجارت بڑھے گی، امریکی سرمایہ کاروں کو پاکستان کے دورے کی دعوت دی جارہی ہے جبکہ ویزے کے حصول کو بھی آسان بنانے کی کوشش جاری ہے۔

امریکا میں پاکستان کے سفیر علی جہانگیر صدیقی نے یہ بات ایف پی سی سی آئی کے صدرغضنفر بلورسے بات چیت کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی چیمبر کی سفارشات پر سنجیدگی سے غور کیا جائے گا اور قابل عمل سفارشات پر عمل کیا جائے گا۔ پاکستانی مصنوعات کی امریکا میں مختلف مقامات پر نمائش کی جائے گی جبکہ پاکستانی کاروباری برادری امریکی سرمایہ کاروں کیلئے تفصیلی تجاویز پیش کرے۔

(جاری ہے)

اس موقع پر ایف پی سی سی آئی کے صدر غضنفر بلور نے کہا کہ قبائلی علاقوں میںامریکی مدد سے صنعتی بستیوں کے قیام کی کوشش کی جائے، پاکستانی* سفارتخانوں اور قونصل خانوں میں ہماری مصنوعات کی نمائش کی سہولت فراہم کی جائے، اور سی پیک پر ایک کانفرنس منعقد کی جائے تاکہ اس منصوبہ کے بارے میں امریکا میں موجود غلط فہمیوں کو ختم کیا جا سکے۔انہوں نے پاکستان میں مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کے امکانات پر بھی تفصیلی بات چیت کی۔

ایف پی سی سی آئی کے چئیرمین کوآرڈینیشن ملک سہیل نے پاکستان کے معدنیات کے شعبہ میں سرمایہ کاری کے امکانات پر روشنی ڈالی اور کہا کہ صوبہ خیبر پختونخوا اور فاٹا کو ترجیح دینے کی ضرورت ہے۔میٹنگ میں ایف پی سی سی آئی کے نائب صدور کریم عزیز ملک اور شفیق انجم، مہمند چیمبر کے صدر فیصد خان، چارسدہ چیمبر کے صدر سکندر خان، سوات چیمبر کے اول نائب صدر اکبر خان، ارسلان کھوکھر اور امریکا میں پاکستان کے کمرشل کونسلر عرفان اور دیگر بھی موجود تھے۔