سرکاری سکولوں کے اساتذہ بچوں کی تربیت میں بہتری لائیں ،ڈپٹی کمشنرمظفرگڑھ

جمعرات دسمبر 23:14

مظفرگڑھ ۔ 13 دسمبر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 13 دسمبر2018ء) ڈپٹی کمشنرڈاکٹر احتشام انور نے کہا ہے کہ انسان کا سب سے قیمتی سرمایہ اولاد ہے ،یہ سرمایہ اساتذہ کے ہاتھ میں ہوتا ہے جس کی وجہ سے معاشرے میں اساتذہ پر سب سے بڑی اور اہم ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ اس سرمایہ کی کردار سازی ، نیت سازی اور مستقبل سازی کریںخورشید آباد گرلز ہائی سکول میں ضلع بھر کے میل اور فی میل اساتذہ اور محکمہ تعلیم کے افسران کے سامنے ضلع مظفرگڑھ کیلئے اپنا تعلیمی و یژن اور راہنما اصول پیش کرتے ہوئے ۔

انہوں نے بتایا کہ اس وقت یو کے کی ویب سائیڈ الف اعلان کے مطابق ضلع مظفرگڑھ تعلیمی لحاظ سے 146ویں نمبر یعنی سب سے آخر پر ہے ، اس کا مطلب ہے کہ ہم اپنی ذمہ داریاں ادا نہیں کررہے، انہوں نے کہا کہ سرکاری سکولوں کے اساتذہ کی تنخواہیں پرائیویٹ سکولوں کے اساتذہ کی کئی گنا ہ زیادہ ہے لیکن کارکردگی کے لحاظ سے بہت پیچھے ہیں، انہوں نے کہا کہ موجودہ صورت حال کے مطابق سرکاری سکولوں میں زیر تعلیم طلبائ و طالبات کا مستقبل بہتر نظر نہیں آرہا ، انہوں نے کہا کہ بحیثیت ڈپٹی کمشنر یہ میری ذمہ داری ہے کہ میں شعبہ تعلیم مین بہتری کیلئے محکمہ تعلیم کے افسران اور اساتذہ کی معاونت سے اصلاحی کام کروں جس سے بہتر نتائج حاصل ہوں گے، انہوں نے کہا کہ ہم نے نیچے سے بہت اوپر جانا ہے جس کیلئے میں بھی آپ لوگوں کے ساتھ چلوں گا، موجودہ وسائل کے ساتھ ہی بہتری لانی ہے، انہوں نے کہا کہ ہراستاد لیڈ ر ہوتا ہے جو مسائل کے حل خود تلاش کرتا ہے ،میرا کام خواب غفلت سے جگانا ہے ، بہتری لانے کیلئے ہر استاد کو غیر معمولی اقدامات کرنا ہوں گے ، رضا کارانہ طور پر کام کرنا ہوگا، چھوٹی کلاس کے بچوں بالخصوص نرسری کلاس کے بچوں پر زیادہ توجہ دینا ہوگی تاکہ ان کی بنیاد بہتر ہو، امتحانات کیلئے ایمرجنسی نافذ کریں ، بچوں کی پروفائل بنائیں تاکہ ان کے گھرانے کے بارے میں پتہ ہو، والدین سے ملاقات کریں، ہم نے پرائیویٹ سکولوں سے پوزیشن واپس لینا ہیں، اس موقع پر ڈپٹی کمشنر احتشام انور نے اعلان کیا کہ آئندہ سے کسی سکول ٹیچر کو اس بات کی اجازت نہیں ہوگی کہ وہ اپنے کلاس کے بچے کو علیحدہ سے ٹیوشن پڑھائے۔

(جاری ہے)

اساتذہ نے ڈپٹی کمشنر کے ویڑن کے مطابق کام کرنے کی یقین دہانی کرائی، اس موقع پر، اے سی مظفرگڑھ ظہور حسین بھٹہ، اے سی علی پور محمد عامر، اے سی کوٹ ادو جام آفتاب، اے سی جتوئی زریاب خان سمیت محکمہ تعلیم کے افسران بھی موجود تھے۔

متعلقہ عنوان :