Live Updates

نجی سکول مالکان اسکول کھولنے پر بضد، والدین نے مخالفت کردی

وزیراعلیٰ سندھ کرونا کے خطرات ٹلنے تک اسکول کھولنے کی اجازت نہ دیں، ٹرسٹی المصطفیٰ ایجوکیشن بورڈ

جمعرات مئی 15:21

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 21 مئی2020ء) المصطفیٰ ایجوکیشن بورڈ کے ٹرسٹی اور معروف صنعتکار فرحان اشرفی نے کرونا وائرس کی روک تھام اور معصوم بچوں کو اس مہلک وبا سے بچانے کے لیے وفاقی و سندھ حکومت کی جانب سے اسکولوں کی تعطیلات15جولائی 2020تک بڑھانے کا خیرمقدم کیا ہے مگر ساتھ ہی کراچی کے نجی اسکولوں کی جانب سے اس فیصلے کے مخالفت اور اسکول کھولنے کے مطالبات پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔

انہوں نے وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ سے اپیل کی کہ وہ اس وقت تک اسکولوںکو کھولنے کی اجازت نہ دیں جب تک کرونا وبا مکمل طور پر قابو میں نہیں آجاتی۔فرحان اشرفی نے وزیراعلیٰ سندھ سے اپیل میں کہا کہ والدین سندھ حکومت کے فیصلے کے برخلاف اسکول کھولنے سے متعلق اسکول مالکان کی کسی بھی خود ساختہ تجویز کو نہیں مانیں گے کیونکہ کرونا وبا مذاق نہیں ایک حقیقت ہے لہٰذا سندھ حکومت اسکول مالکان کو سرکار کی رٹ چیلنج کرنے اور معصوم بچوں کی زندگیاں جان بوجھ کر خطرے میں ڈالنے سے باز رکھے اور سختی سے اس کا نوٹس لیا جائے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ جب تک کرونا کے خطرات ختم نہیں ہوتے والدین بچوں کو اسکول نہیں بھیجیں گے اس کے برعکس اسکول مالکان نجانے کیوںمعصوم بچوں کی زندگیاں داؤ پر لگانا چاہتے ہیں شاید اسکول مالکان کو معصوم بچوں کی زندگیوں سے زیادہ پیسہ کمانے کی فکر لاحق ہے جو کہ انتہائی شرمناک امر ہے وہ بھی ایسے وقت میں جب کرونا کی وبا نے سنگین صورتحال پیدا کی ہوئی ہے ۔

انہوںنے سوال اٹھایا کہ جب والدین ہی اپنے بچوں کو وبا کے خطرات ٹلنے تک اسکول بھیجنے پر راضی نہیں تو اسکول مالکان کون ہوتے ہیں ہم پر اپنے فیصلے مسلط کرنے والے۔فرحان اشرف نے وزیراعلیٰ سندھ سے اپیل کی نجی اسکول مالکان چاہے جتنا دباؤ بڑھائیں انہیں کروناکی وبا کے خطرات ٹلنے تک اسکول کھولنے کی ہرگز اجازت نہ دی جائے بصورت دیگر سندھ حکومت کی کرونا وائرس کی روک تھام کے لیے دی گئی معاشی قربانی اور کوششیں ضائع ہونے کا خدشہ ہے۔
پاکستان میں کرونا وائرس خطرناک حد تک بڑھ گیا سے متعلق تازہ ترین معلومات

متعلقہ عنوان :