ایران، حکومت مخالف ریسلنگ چیمپئن کھلاڑی کو سزائے موت دیدی گئی

27 سالہ نوید افکاری ریسلنگ چیمپئن تھے ، 2018ء میں حکومت مخالف مظاہروں میں شامل ہوئے تھے

Zeeshan Mehtab ذیشان مہتاب اتوار ستمبر 12:57

ایران، حکومت مخالف ریسلنگ چیمپئن کھلاڑی کو سزائے موت دیدی گئی
تہران (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار ۔ 13 ستمبر 2020ء ) حکومت کے خلاف احتجاجی مظاہروں کے دوران سکیورٹی گارڈ کو قتل کرنے کے الزام میں ریسلنگ کے ملکی چیمپئن کو سزائے موت دیدی گئی۔ ایران کے سرکاری ٹیلی وژن کے مطابق ملک کے نوجوان چیمپئن ریسلر نوید افکاری کی سزائے موت پر عمل درآمد کردیا گیا ہے۔ ریسلر کو سزائے موت نہ دینے کے لیے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ٹویٹ بھی کی تھی جس میں ایرانی حکومت سے 27 سالہ نوجوان ریسلر کی زندگی تباہ نہ کرنے کی اپیل کی گئی تھی۔

(جاری ہے)

صوبے فارس کے جج کاظم موسوی نے سرکاری ٹیلی وژن کو بتایا کہ نوید افکاری کو 2018ء میں حکومت مخالف مظاہروں کے دوران سکیورٹی گارڈ حسن ترکمان کو تیز دھار آلے سے بار بار ضربیں لگا کر قتل کرنے پر شیراز کی عدیل آباد جیل میں سزائے موت دی گئی۔ دوسری جانب سوشل میڈیا صارفین نے نوجوان ریسلر کو سزائے موت پر شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ نوجوان ریسلر نوید افکاری اور ان کے بھائی کو حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت کرنے کی سزا دی گئی ہے۔ یہ آزادی اظہار رائے کی بنیادی انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزی ہے۔