ملاوٹ اور ذخیرہ اندوزی جیسے قبیح فعل میں ملوث عناصر سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائیگا،ڈپٹی کمشنرعمیر

جمعرات ستمبر 22:45

ڈی آئی خان۔24 ستمبر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 24 ستمبر2020ء) ڈپٹی کمشنر ڈیرہ اسماعیل خان محمد عمیر نے کہا ہے کہ ملاوٹ اور ذخیرہ اندوزی جیسے قبیح فعل میں ملوث عناصر سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائیگا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج اپنے دفتر میں ڈسٹرکٹ پرفارمنس ریویوکے سلسلے میں منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر نور عالم محسودکے علاوہ اسسٹنٹ کمشنرز، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنرز ، ڈسٹرکٹ ڈائریکٹر محکمہ زراعت، ڈپٹی ڈائریکٹر حلال فوڈ اتھارٹی، چیف ڈرگ انسپکٹر و دیگر متعلقہ محکموں کے افسران و نمائندوں نے شرکت کی۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر محمد عمیر نے کہا کہ اشیاء خوردونوش میں ملاوٹ جہاں ایک طرف صحت کیلئے نقصان دہ ہے وہیں اسلام میں بھی اسکی سختی سے ممانعت کی گئی ہے لہذا ایسے عناصر کیخلاف آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے ۔

(جاری ہے)

انہوں نے ہدایت کی کہ اشیاء خوردونوش میں ملاوٹ اور ادویات کے معیار اور زائد المعیاد ادویات کی جانچ کیلئے روزانہ کی بنیاد پر بازاروں سمیت دیگر مقامات کے دورے کیے جائیں جس کے دوران انہیں ضلعی انتظامیہ کی جانب سے بھی معاونت حاصل رہے گی اور روزانہ کی بنیاد پر جانچ سمیت کاروائی کی رپورٹ پیش کی جائے۔

مزید یہ کہ بازاروں میں دستیاب مختلف مشروبات کا صحت کے حوالے سے لیب ٹیسٹ بھی کرایا جائے جس پر ڈپٹی ڈائریکٹر حلال فوڈ اتھارٹی نے بتایا کہ اس سلسلے میں پہلے ہی سائنٹفک کمیٹی تشکیل دی جا چکی ہے۔اسی طرح ڈپٹی کمشنر نے مزید ہدایت کی کہ ذخیرہ اندوزی بالخصوص گندم، آٹے اور چینی کی ذخیرہ اندوزی کے تدارک کیلئے متعلقہ محکمے اور انتظامی افسران ٹیمیں تشکیل دیں تاکہ ضلع بھر میں جہاں سے بھی اس حوالے سے شکایت موصول ہو تو فوری کاروائی عمل میں لائی جائے کیونکہ ذخیرہ اندوزی سمیت ناجائز منافع خوری کسی صورت قابل قبول نہیں ۔

انہوں نے متعلقہ افسران کو ہدایت کی کہ تمام دکانداروں کو ا س بات کا پابند بنایا جائے کہ سرکاری نرخنامہ نمایاں جگہ پر آویزاں کریں ۔انہوں نے کہا کہ محکمہ خوراک آٹے کے سرکاری نرخ پر فروخت کے حوالے سے مقرر کردہ تمام مقامات کی تفصیل پیش کرے۔ انہوں نے ہدایت کی کہ روزانہ کی بنیاد پر فلور ملز کا معائنہ یقینی بنایا جائے۔انہوں نے تمام اسسٹنٹ کمشنر ز کو ہدایت کی کہ گندم کی دستیابی سے متعلق رپورٹ پیش کریں تاکہ گندم کی دستیابی کو یقینی بنانے کیلئے بروقت اقدامات اٹھائے جا سکیں۔

ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ چیف سیکرٹری خیبر پختونخوا نے صوبہ بھر میں اشیاء خوردونوش میں ملاوٹ، ذخیرہ اندوزی اور ناجائز منافع خوری پر خصوصی توجہ مرکوز کی ہوئی ہے تاکہ ایسے قبیح فعل میں ملوث عناصر کی بیخ کنی کی جا سکے لہذا ان احکامات کو مدنظر رکھتے ہوئے ان عناصر کے تدارک کیلئے تمام تر کاوشیں بروئے کار لائی جائیں۔انہوں نے کہا کہ پلاسٹک شاپنگ بیگز جو کہ ماحولیاتی آلودگی کا سبب بن رہے ہیں کے تدارک کے حوالے سے عوام میں شعور اجاگر کرنے کیلئے بھی اقدامات اٹھائے جائیں جبکہ پلاسٹک شاپنگ بیگز بنانے والی انڈسٹریز کو نہ صرف بائیوڈیگریڈایبل بیگز تیار کرنے کا پابند بنایا جائے بلکہ وقت کے ساتھ ساتھ پلاسٹک کا متبادل استعمال کیا جائے ۔

انہوں نے عوام سے بھی اپیل کی کہ ماحولیاتی آلودگی کا سبب بننے والے پلاسٹک شاپنگ بیگز کا استعمال کم سے کم کریں تاکہ صاف اور سرسبز پاکستان کا خواب شرمند ہ تعبیر ہو سکے۔انہوں نے مزید ہدایت کی کہ پاکستان سٹیزن پورٹل پر عوامی شکایات کے حتی الوسع حل اور بروقت ازالے کو بھی یقینی بنایا جائے۔

متعلقہ عنوان :