پاکستان کوسٹ گارڈز کی سمگلرز کیخلاف کارروائیاں جاری ،9 ملزمان گرفتار

ایرانی ڈیزل ،گٹکا، چھالیہ ،غیر ملکی سگریٹ سمیت330ملین مالیت کی متفرق اشیاء برآمد

منگل اکتوبر 23:21

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 13 اکتوبر2020ء) پاکستان کوسٹ گارڈزکی اسمگلنگ کے خلاف مختلف کاروائیاں جاری۔ترجمان پاکستان کوسٹ گارڈ کے مطابق پاکستان کوسٹ گارڈز ذمہ داری کے ساتھ علاقے میں غیر قانونی کاروباراور اسمگلنگ کے خلاف ادارہ ہذا کی کارروائیوں کو جاری رکھے ہوئے ہیں اور حتی الوسع کو شش کی جارہی ہے کہ غیر قانونی کارو باری سر گرمیوں کو روکا جا سکے۔

اس سلسلہ میں پچھلے دو ہفتے میں کی گئی کارروائیوں کی تفصیلات درج ذیل ہیں۔ناکہ کھاری چیک پوسٹ (وندر بلوچستان)پردوران چیکنگ سبزی سے بھر ے مزدا ٹرک سے سبزی میں چھپائی گئی46کلو گرام اعلی کوالٹی کی چرس برآمد کر کے 1فرد کو گرفتار کر لیا گیا۔ناکہ کھاری چیک پوسٹ پر مختلف گاڑیوں کی تلاشی کے دوران754 کلو گرام چھالیہ،576اسٹیک غیر ملکی سگریٹ 490 پیکٹ انڈین گٹکا اور متفرق اشیاء برآمد کرلی گئیں۔

(جاری ہے)

ناکہ کھاری چیک پوسٹ پر مختلف گاڑیوں کی چیکنگ اور وندر(بلوچستان) شہر کے قریب مختلف چھاپوں میں غیر قانو نی طریقے سے چھپایا گیا1لاکھ 35ہزار لیٹرایرانی ڈیزل برآمدکر لیاگیا۔ سپر ہائی وے (کراچی) سے دوران چیکنگ چار مختلف ٹرکوں سے 29,686کلو گرام چھالیہ برآمد کر تے ہو ئے 08افراد کوحراست میں لے لیا گیا۔ تمام اسمگل کی جانے والی منشیات، چھالیہ،ایرانی ڈیزل، متفرق اشیاء عددمزدا ٹرک اور9افراد کو پاکستان کوسٹ گارڈزنے اپنی تحویل میں لے کر مزید قانونی کارروائی جاری ہے۔

پکڑی جانے والی چھالیہ،ایرانی ڈیزل ا ور متفرق اشیاء کی مالیت تقریباً330ملین روپے کے لگ بھگ ہے۔ پاکستان کوسٹ گارڈز اس امر کا اعادہ کرتی ہے کہ مستقبل میں بھی اس طرح کی کاروائیاں تسلسل کے ساتھ جاری رہیں گی تا کہ وطنِ عزیز کو اس لعنت سے نجات دلائی جا سکے اور اس مقصد کے حصول کے لئے تمام دستیاب وسائل کو بھرپور طریقے سے بروئے کار لایا جائی