نیوزی لینڈ نے بنا تماشائیوں کے میچ کے انعقاد کی پیش کش بھی قبول نہ کی

وزیر اعظم عمران خان نے یقین دہانی کروائی تھی کہ سکیورٹی کا کوئی مسئلہ نہیں ہو گا، پاکستان میں امن کی کوششوں کو سبوتاز کرنے کی کوشش کی گئی: وزیر داخلہ شیخ رشید احمد

muhammad ali محمد علی جمعہ 17 ستمبر 2021 19:22

نیوزی لینڈ نے بنا تماشائیوں کے میچ کے انعقاد کی پیش کش بھی قبول نہ کی
اسلام آباد (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔17ستمبر2021ء) نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ کا قابل مذمت فیصلہ، سیکورٹی خدشات کے اظہار پر بنا تماشائیوں کے میچ کے انعقاد کی پیش کش بھی قبول نہ کی۔ تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیرداخلہ شیخ رشید نے نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کے دورہ پاکستان منسوخ کیے جانے کے حوالے سے برا انکشاف کیا ہے۔ وفاقی وزیر کے مطابق سیکورٹی خدشات کا اظہار کرنے پر نیوزی لینڈ کو بنا تماشائیوں کے میچ کروانے کی پیش کش کی گئی، تاہم ہماری پیش کش قبول نہیں کی گئی۔

وزیر داخلہ کے مطابق وزیرعظم عمران خان نے نیوزی لینڈ کی وزیراعظم سے بات کی، نیوزی لینڈ کی ٹیم کو مکمل طور پر سیکیورٹی فراہم کی، ہماری پولیس، افواج سمیت کسی ادارے کے پاس کوئی تھریٹ نہیں، ہم نے نیوزی لینڈ کو بغیر تماشائی میچز کروانے کی پیش کش کی، نیوزی لینڈ کو ہر طرح راضی کرنے کی کوشش کی۔

(جاری ہے)

لیکن وہ نہیں مانے۔ نیوزی لینڈ کی وزیراعظم نے کہا تھریٹ کا مسئلہ نہیں ہے، نیوزی لینڈ کی ٹیم نے یکطرفہ طور پر اپنا دورہ منسوخ کیا، نیوزی لینڈ کے دورے کو ایک سازش کے تحت ختم کیا گیا ہے۔

وزیرداخلہ شیخ رشید احمد نے کہا کہ پاکستان دنیا میں امن اور سکون کا سب سے بڑا داعی ہے، پاکستان دہشتگردی سے نمٹنے کیلئے انتہائی مضبوط اور زبردست ادارے رکھتا ہے، ہمارے اداروں نے بہت کوشش کی وہ مان جائیں، یہ کس کی سازش ہے میں یہاں نام نہیں لینا چاہتا۔ دستانے پہنے ہوئے ہاتھوں نے سازش کی، دستانے پہنے ہوئے ہاتھ پاکستان کو قربانی کا بکرا بنانا چاہتے تھے۔

انہوں نے کہا کہ مجھے اطلاع ملی ہے کہ انگلینڈ ٹیم بھی انہی راستوں اور باتوں پر غور کررہی ہے، انگلینڈ ٹیم جو بھی فیصلہ کرے گی ان کا اپنا فیصلہ ہوگا، انگلینڈ ٹیم کیلئے زبردست سکیورٹی انتظامات کیے ہیں، پاکستانی اداروں کو کوئی سکیورٹی تھریٹ موصول نہیں ہوا۔ یہ وزارت داخلہ کی ناکامی نہیں ہے۔ انگلینڈ کی ٹیم کو آنے کی صورت میں مکمل سکیورٹی دی جائے گی،ہم انہیں ویلکم کرنے کے لیے تیار ہیں ۔