حمزہ کی ہلاکت کی ایف آئی آر وزیر اعلیٰ، وزیر بلدیات اور ایڈمنسٹریٹر کراچی کیخلاف درج کی جائے،خرم شیر زمان

ہم چیف جسٹس سے حمزہ کے واقعے کا نوٹس لینے کی درخواست کرتے ہیں ، نوٹس سے ہی اس صوبے کے حکمرانوں پر کچھ اثر ہوگا،رہنما تحریک انصاف

منگل 21 ستمبر 2021 17:57

حمزہ کی ہلاکت کی ایف آئی آر وزیر اعلیٰ، وزیر بلدیات اور ایڈمنسٹریٹر ..
کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 21 ستمبر2021ء) پاکستان تحریک انصاف کراچی کے صدر و رکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان نے گارڈن ویسٹ کے علاقے میں گٹر میں گر کر جاں بحق ہونے والے بچے حمزہ کے گھر پہنچ کر ان کے اہل خانہ سے تعزیت کی۔ بعد ازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خرم شیر زمان کا کہنا تھا کہ ہم نے آج حمزہ کے اہل خانہ سے ملاقات کی ہے۔

حکومت کی لاپرواہی کی وجہ سے چاند جیسا بچہ حمزہ دنیا سے چلا گیا ۔ کئی بچے کتے کے کاٹنے سے انتقال کرگئے۔ کئی بچے ویکسین نہ ملنے سے مرگئے، کئی بچے نالوں میں میں مرگئے۔ گٹر کا ڈھکنا نہ ہونے سے معصوم حمزہ انتقال کرگیا۔ صوبے کے چیف مینیجر مراد علی شاہ کو شرم نہیں آئی۔ اس صوبے میں حکومت کو عوام کی زندگی سے کوئی غرض نہیں ہے ۔

(جاری ہے)

حکومت سندھ کو عوام کے کسی مسئلے سے سروکار نہیں ہے ۔

تھر میں بچے بھوک و افلاس سے مررہے ہیں ۔ لاڑکانہ میں ایڈز سے بچے مررہے ہیں۔ گندا پانی پینے سے لوگ مررہے ہیںلیکن پیپلز پارٹی کو عوام کے بجائے بس اپنی کرپشن کی فکر ہے۔ یہ اسکولوں کے ڈیسکوں میں کرپشن کررہے ہیں۔ہزاروں روپے بھی نہیں چھوڑتے۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ رکن سندھ اسمبلی رمضان گھانچی، پی ٹی آئی رہنما اظہر لغاری، فراز لاکھانی اور دیگر موجود تھے۔

خرم شیر زمان کا مزید کہنا تھا کہ ہماری اپیل ہے کہ چیف جسٹس صاحب ان بچوں کا احساس کریں ۔ہم چیف جسٹس سے حمزہ کے واقعے کا نوٹس لینے کی درخواست کرتے ہیں ۔ ہمارے پاس ان کا مقابلہ کرنے کیلئے سڑکیں ہیں جہاں ہم احتجاج کر سکتے ہیں، ہم پیپلز پارٹی کا مقابلہ اسمبلیوں میں کرسکتے ہیں لیکن ہم آپ کی عدالتوں میں ان بچوں کا انصاف مانگ رہے ہیں۔چیف جسٹس کے نوٹس سے ہی اس صوبے کے وزیر اعلیٰ، ایڈمنسٹریٹر کراچی، وزیر بلدیات پر کچھ اثر ہوگا۔

انہوں نے مزید کہا کہ حمزہ کی ہلاکت کی ایف آئی آر مراد علی شاہ کیخلاف درج کی جائے ۔اس ایف آئی آر میں وزیر بلدیات اور ایڈمنسٹریٹر کراچی کو نامزد کیا جانا چاہئے۔ یہ 3 شخص اس واقعے کے ذمہ دار ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ سندھ حکومت کے چمچوں کی دکان پکوڑوں کی ہے اور باتیں کروڑوں کی ہیں ۔سندھ میں دن بدن حالات بدتر ہوتے جارہے ہیں ۔آڈیٹر جنرل کی رپورٹ کے مطابق زکوٰة کے محکمے میں کرپشن کی گئی۔

دریں اثناء ،پی ٹی آئی کراچی کے صدر ورکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان نے سندھ اسمبلی کے اجلاس کا بائیکاٹ کردیا۔خرم شیر زمان اجلاس میں 4 سالہ حمزہ کے گٹر میں گرنے کے حوالے سے بات کررہے تھے ،اسپیکر اسمبلی کی جانب سے خرم شیر زمان کا مائک بند کردیا گیا۔ خرم شیر زمان کا کہنا تھا کہ صوبہ سندھ کے بچے گٹر کے ڈھکن نہ ہونے کی وجہ سے گر کر مررہے ہیں، پیپلز پارٹی کی سندھ حکومت کیلئے شرم سے ڈوب مرنے کا مقام ہے۔