Live Updates

2023 کے الیکشن میں عمران خان کو سرپرائز مل سکتا ہے

مہنگائی عمران خان کی حکومت کو ختم نہیں کر سکتی لیکن وہ کہتے تھے کرپٹ عناصر کو جیل میں ڈالیں گے، بیرون ملک سے لوٹا ہوا پیسا واپس لائیں گے ابھی تک ایک بھی وعدہ وفا نہیں کیا،اس معاملے پر انہیں مشکل ہو سکتی ہے۔تجزیہ کار امجد شعیب

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان جمعہ 22 اکتوبر 2021 16:43

2023 کے الیکشن میں عمران خان کو سرپرائز مل سکتا ہے
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔22 اکتوبر2021ء) معروف تجزیہ کار امجد شعیب کا کہنا ہے کہ 2023 کے الیکشن میں عمران خان کو سرپرائز مل سکتا ہے ۔ سینئر تجزیہ امجد شعیب کا پبلک ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو میں کہنا ہے کہ اپوزیشن نے مہنگائی پر کارڈ کھیلنے کی کوشش تو کی ہے لیکن عوام جانتے ہیں کہ ان کے پاس کچھ نہیں ہے کہ اگر یہ کل کو حکومت میں آتے ہیں تو کچھ کر پائیں گے۔

عوام کو یہ بھی پتہ ہے کہ اپوزیشن کے بنیادی طور پر اپنے مفادات ہیں۔نوازشریف اپنی بیٹی کے لیے بھاگ دوڑ کر رہے ہیں۔دوسرا گروپ آصف علی زردار اپنے بیٹے کے لیے کوشاں ہیں، عوام کی تو ان کو پرواہ ہی نہیں، یہ لوگ عوام کا بس استعمال کرتے ہیں۔امجد شعیب نے مزید کہا کہ مجھے نہیں لگتا مہنگائی عمران خان کی حکومت کےلیے خطرہ ثابت ہو سکتی ہے۔

(جاری ہے)

عمران خان کو دیگر بے شمار چیزوں سے خطرہ ہے۔

وزیراعظم عمران خان کہتے تھے کرپٹ عناصر کو جیل میں ڈالیں گے۔ بیرون ملک سے لوٹا ہوا پیسا واپس لائیں گے۔ ابھی تک ایک بھی وعدہ وفا نہیں کیا اس وجہ سے 2023 کے الیکشن میں عمران خان کو سرپرائز مل سکتا ہے
۔ واضح رہے کہ ملک بھر میں مہنگائی میں بے تحاشہ اضافہ ہو چکا ہے۔ مسلم لیگ ن نے مہنگائی کے پیش نظر حکومت کو ٹف ٹائم دینے کی تیاری کر لی ہے۔

مسلم لیگ ن کی جانب سے ملک گیر احتجاج، ریلیوں، جلوسوں اور مظاہروں کے پروگرام کو حتمی شکل دے دی گئی ہے۔ ملک گیر احتجاج کے سلسلے میں مرکز اور صوبائی سطح پر مختلف کمیٹیاں تشکیل دی گئی ہیں۔ مہنگائی کے خلاف ملک گیر احتجاج کے سلسلے میں پہلا احتجاجی مظاہرہ راولپنڈی میں کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ اپوزیشن جماعتوں کی مہنگائی کے خلاف تحریک کے پیش نظر وزیراعظم عمران خان نے پارٹی کو متحرک اور فعال کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔وزیراعظم نے اہم قومی ایشوز پر پارٹی کی مرکزی و صوبائی قیادت سے مشاورت کا فیصلہ کر لیا ہے۔
Live مہنگائی کا طوفان سے متعلق تازہ ترین معلومات