ملک میں مجموعی مہنگائی شرح کم ہوکر 18.62 فیصد کی سطح پر آگئی

کم آمدنی والے افراد کیلئے مہنگائی کی شرح 20.24 فیصد ہوگئی، ایک ہفتے میں 17 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہوا۔ وفاقی ادارہ شماریات کی رپورٹ

Sanaullah Nagra ثنااللہ ناگرہ جمعہ 28 جنوری 2022 19:58

ملک میں مجموعی مہنگائی شرح کم ہوکر 18.62 فیصد کی سطح پر آگئی
اسلام آباد (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 جنوری 2022ء) ملک میں مجموعی مہنگائی شرح کم ہوکر 18.62 فیصد کی سطح پر آگئی، جس کے باعث کم آمدنی والے افراد کیلئے مہنگائی کی شرح 20.24 فیصد ہوگئی، ایک ہفتے میں17 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہوا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وفاقی ادارہ شماریات نے مہنگائی پر ہفتہ وار رپورٹ میں کہا ہے کہ مہنگائی کی شرح میں مسلسل دوسرے ہفتے کمی دیکھی گئی ہے، ایک ہفتے میں 8 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی اور 17 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے۔

ملک میں مہنگائی کی شرح کم ہوکر 18.62 فیصد کی سطح پر آگئی ہے جبکہ کم آمدنی والے افراد کیلئے مہنگائی کی شرح 20.24 فیصد ہوگئی ہے۔ حالیہ ہفتے میں جن17 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ان میں ٹماٹر 18 روپے 53 پیسے فی کلو کا اضافے کے بعد نئی قیمت 78 روپے71 پیسے ہوگئی ہے، لہسن 13 روپے55 پیسے فی کلو، دال چنا  ایک روپے 92 پیسے فی کلو، دال ماش 2 روپے57 پیسے فی کلو، دال مسور ایک روپے 54 پیسے اور دال مونگ کی قیمت68 پیسے فی کلو بڑھ گئی ہے۔

(جاری ہے)

اسی طرح مٹن 2 روپے 45 پیسے، بیف ایک روپے 46 پیسے فی کلو، آٹے کا20 کلو کا تھیلا 2 روپے51 پیسے مہنگا ہوگیا ہے۔ وفاقی ادارہ شماریات کی رپورٹ میں بتایا گیا کہ حالیہ ہفتے میں 8 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔ ان میں اشیاء میں 200 گرام سرخ مرچ کے پیکٹ کی قیمت25 روپے 85 پیسے کم ہوکر259 روپے 90 پیسے، آلو ایک روپے 70 پیسے ، پیازایک روپے 15 پیسے فی کلو، انڈوں کی قیمت میں3 روپے 83 پیسےفی درجن سستے ہوگئے ہیں۔ برائلر مرغی 3 روپے 20 پیسے سستی ہوکر 184 روپے 6 پیسے فی کلو، چینی کی فی کلوایک روپے 5 پیسے، ایل پی جی کے گھریلو سلنڈر کی قیمت 48 روپے 56 پیسے کم ہوگئی ہے۔ اسی طرح حالیہ ہفتے میں26 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں استحکام ریکارڈ کیا گیا۔