Live Updates

سیالکوٹ میں پولیس کی کارروائی سے لندن پلان پر عملدرآمد کا آغاز ہو گیا

پاکستان تحریک انصاف نے سیالکوٹ کی صورتحال پر سپریم کورٹ سے سوموٹو نوٹس لینے کا مطالبہ کر دیا

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان ہفتہ 14 مئی 2022 11:52

سیالکوٹ میں پولیس کی کارروائی سے  لندن پلان پر عملدرآمد کا آغاز ہو گیا
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 مئی2022ء) چئیرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے سیالکوٹ کی صورتحال پر ہنگامی اجلاس طلب کر لیا۔اجلاس عمران خان کی زیر صدارت بنی گالا میں ہوگا۔پی ٹی آئی کی مرکزی قیادت اجلاس میں شریک ہو گی۔اجلاس میں ملکی سیاسی اور سیالکوٹ کی صورتحال کا جائزہ لیا جائے گا۔عمران خان موجودہ صورتحال پر مرکزی قیادت سے مشاورت کریں گے اور آئندہ کی حکمت عملی پر غور کیا جائے گا۔

اجلاس میں سیالکوٹ اور دیگر شہروں میں جلسوں کی حکمت عملی بھی طے کی جائے گی۔جبکہ تحریک انصاف نے سیالکوٹ میں پولیس کی کارروائی کو لندن پلان پر عملدرآمد کا آغاز قرار دیتے ہوئے سپریم کورٹ سے سوموٹو نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ماہر قانون ڈاکٹر بابر اعوان نے کہا ہے کہ سیالکوٹ میں لندن پلان پر عمل درآمد کا آغاز ہو گیا۔

(جاری ہے)

پی ٹی آئی کے خالی ہاتھ پرامن کارکنوں کی گرفتار آئین توہین ہے،سیالکوٹ میں آئین حقوق کی پامالی پر سپریم کورٹ سو موٹو نوٹس لے۔

عدل کے دروازے کارکنوں کے لیے 24 گھنٹے کھلے رہنے چاہئیں، جلسہ تو ہو گا یہ پاکستان ہے سری لنکا نہیں۔خیال رہے کہ سیالکوٹ میں پاکستان تحریک انصاف اورانتظامیہ کے درمیان جلسے کا معاملہ شدت اختیار کرگیا ہے۔ سیالکوٹ میں تحریک انصاف کی سی ٹی آئی گراؤنڈ میں بغیر اجازت جلسے کی تیاریاں کرنے پر پولیس نے عثمان ڈار سمیت کئی کارکنوں کو گرفتار کرلیا ہے۔

پولیس کی شیلنگ اور لاٹھی چارج پی ٹی آئی کارکن منتشر ہوگئے۔ پولیس نے کرین کی مدد سے جلسہ گاہ سے سامان ہٹانا شروع کر دیا۔ ضلعی انتظامیہ نے تحریک انصاف کو جلسے کی اجازت نہیں دی تھی۔ اس موقع پر عثمان ڈار کا کہنا تھا کہ جیل میں ڈالنے سے کپتان کی محبت کم نہیں ہوگی، ہم جیل سے باہر نکلیں گے، پھر جلسہ کریں گے، عمران خان سیالکوٹ میں جلسہ کرنے آئیں گے، عمران خان کیساتھ کھڑے ہیں، جیلیں بھر دیں گے۔

دوسری جانب ڈی پی او سیالکوٹ کا کہنا ہے کہ یہ مسیحی برادری کی جگہ ہے، مسیحی برادری نےکہا کہ ہماری جگہ پر سیاسی جماعت جلسہ کر رہی ہے، عبادت گاہ کے سامنے زبردستی جلسے کی اجازت نہیں دے سکتے۔ ہم انہیں جلسے کے لیے متبادل جگہ دینے کے لیے تیار ہیں۔مسیحی کمیونٹی نے ہائیکورٹ میں درخواست دی تھی، ہائیکورٹ کا حکم ہے کہ گراؤنڈ میں جلسے کو روکیں، ڈپٹی کمشنر نے جلسے کی جازت دینے سے انکار کر دیا ہے جبکہ ہمارے پاس ہدایات ہیں کہ قانون کے مطابق کارروائی کی جائے۔
Live عمران خان سے متعلق تازہ ترین معلومات