بھارت، آسارام باپو پر جنسی زیادتی کا الزام ثابت

بدھ اپریل 14:33

نئی دہلی ۔ (اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ بدھ اپریل ء) بھارت کے ایک معروف گرو آسارام باپو کو جنسی زیادتی کے ایک مقدمے میں قصور وار قرار دے دیا گیا ہے۔ جج نے فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ 77 سالہ گرو کے لیے سزا کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔

(جاری ہے)

آسارام نے 2013ء میں اپنی پیروکار کمسن بچی کو ہوس کا نشانہ بنایا تھا۔ ممکنہ احتجاج کی وجہ سے اس مقدمے کی کارروائی ریاست راجستھان کی ایک جیل میں مکمل کی گئی۔ آسارام باپو کو عمر قید تک کی سزا ہو سکتی ہے۔ آسارام اور ان کے بیٹے پر جنسی زیادتی کا ایک اور مقدمہ بھی قائم ہے۔ دنیا بھر میں آسارام کے 4 سو سے زائد آشرم ہیں۔

متعلقہ عنوان :

Your Thoughts and Comments