چیف جسٹس کا فاؤنٹین ہاؤس کا دورہ؛ مریضہ نے انوکھی خواہش کا اظہار کر ڈالا

چیف جسٹس نے اپنی بیٹی کو مریضہ کی خواہش کے مطابق اسے پرفیوم اور چوڑیاں فراہم کرنے کی ہدایت کی

اتوار جون 16:48

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ اتوار جون ء) چیف جسٹس آف پاکستان میاں محمد ثاقب نثار نے فاؤنٹین ہاؤس کو ایک لاکھ روپے کا عطیہ کرنے کے ساتھ ساتھ تمام خواتین مریضوں کو چوڑیاں اور پرفیوم دینے کا حکم دے دیا۔تفصیلات کے مطابق لاہور میں چیف جسٹس ثاقب نثار نے اپنے بیٹی کے ہمراہ فاؤنٹین ہاؤس کا دورہ کیا۔چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے فاؤنٹین ہاؤس کے مختلف وارڈز کا دورہ کیا۔

اس موقع پر چیف جسٹس ثاقب نثار نے وارڈز میں مریضوں کی خیریت دریافت کی۔چیف جسٹس نے ایک مریضہ سے کہا کہ آپ کو کچھ چاہئیے؟تو مریضہ نے چیف جسٹس سے پرفیوم اورچوڑیوں کی خواہش ظاہر کی جس پر چیف جسٹس نے اپنی بیٹی کو مریضہ کو پرفیوم، چوڑیاں فراہم کرنے کی ہدایت کی۔

(جاری ہے)

فاؤنٹین ہاؤس میں دورے کے موقع پر چیف جسٹس نے مخلتف مریضوں سے گفتگو کی اس موقع پر چیف جسٹس نے ایک ایم ایس سی کیمسٹری مریضہ سے گفتگو بھی کی۔

چیف جسٹس نے مریضہ سے دریافت کیا کہ آپ کس فیملی سے تعلق رکھتی ہیں، آپ سے کوئی ملنے آتا ہے؟ مریضہ نے جواب دیا کہ میں 30جون کو اپنے گھر واپس چلی جاؤں گی۔چیف جسٹس نے دیگر مریضوں سے بھی معلومات لیں اوران کی جلد گھروں کو واپسی کی دعا کی، چیف جسٹس آف پاکستان میاں محمد ثاقب نثار نے فاؤنٹین ہاؤس کو ایک لاکھ روپے کا عطیہ کرنے کے ساتھ ساتھ تمام خواتین مریضوں کو چوڑیاں اور پرفیوم دینے کا حکم بھی دیا۔

دورے کے موقع پر انہوں نے کہا کہ فاؤنٹین ہاؤس میں مریضوں کے لئےانتظامات سے مطمئن ہوں، ہمیں اپنے مریضوں کا خیال رکھنا چاہئے۔یاد رہے کہ چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار اس وقت عوام میں مقبول ہو گئے ہیں۔۔چیف جسٹس میاں ثاقب نثار اتوار کےروز بھی عدالت لگاتے ہیں۔ایک تقریب کے دوران چیف جسٹس نے کہا تھا کہ میں نے اپنے اہل خانہ سے کہہ دیا ہے کہ میں ایک سال کے لیے آپ کا نہیں اور آپ میرے نہیں۔

Your Thoughts and Comments