بند کریں
صحت مضامینغذا اور صحتکلیجی کے فائدے

مزید غذا اور صحت

پچھلے مضامین - مزید مضامین
کلیجی کے فائدے
قدیم یونانی اور مصری اس پریقین رکھتے تھے کہ لوگوں کے لیے گائے کی کلیجی کھانا ضروری ہے، اس لیے کہ اس میں زخموں کومندمل کرنے والی خاصیت ہوتی ہے۔
ٓصباگل حسن:
قدیم یونانی اور مصری اس پریقین رکھتے تھے کہ لوگوں کے لیے گائے کی کلیجی کھانا ضروری ہے، اس لیے کہ اس میں زخموں کومندمل کرنے والی خاصیت ہوتی ہے۔ کلیجی نہ صرف مزے دار، بلکہ توانائی بخش بھی ہوتی ہے۔ یہ غذائیت سے بھرپور ہوتی ہے اور اسے کھانے سے آپ کو بہت سے فائدے حاصل ہوتے ہیں۔
بڑھوتری میں اضافہ اور زخموں کومندمل کرتی ہے:
اگر آپ کے گھر میں سات برس سے لے کرپندرہ برس تک کے بچے ہوں تو آپ اپنے گھرمیں کلیجی خرید کرضرور لائیے، اس لیے کہ کلیجی میں لحمیات (پروٹینز) زیادہ ہوتی ہیں، جوبڑھوتری کے لیے ضروری ہیں۔ اس میں زخموں کو مندمل کرنے کی خاصیت بھی ہوتی ہے۔ اس کے علاوہ اس میں فولادہونے کی بناپر جسم میں خون کی کمی نہیں ہوتی۔ خون کی کمی ہونے پرکم زوری ہوجاتی ہے۔ تھکن اور غنودگی طار ی رہتی ہے۔
اعصابی نظام کے لیے طاقت بخش:
کلیجی میں حیاتین ب (وٹامن بی) ہوتی ہے، لہٰذا اگراعصابی نظام میں کوئی بے ترتیبی اور انتشار پیدا ہوجائے تواسے کھاتے رہنے سے درستی ہوجاتی ہے۔ اس کے علاوہ یہ مرض نسیان (الزائمر) اور پراگندہ ذہنی کے خاتمے کے لیے بھی مفید ہے۔ بڑھاپے میں جب ذہنی توانائی متاثر ہونے لگتی ہے توکلیجی ضروررکھنا چاہیے۔
سرطان سے بچاتی ہے:
کلیجی میں تانبا ہوتاہے۔ حالیہ تحقیق سے یہ معلوم ہواہے کہ جب جسم میں تانبے کی کمی ہوجاتی ہے توسرطان ہونے کاخطرہ ہو جاتا ہے۔ اس لیے کہ تانبا خامروں (انزائمز) کونظم وضبط کی حالت میں رکھتا ہے، جوجسم کی مانع تکسید سرگرمیوں میں اضافہ کرتے ہیں۔ ماہرین کامشورہ کہ ہفتے میں ایک بارکلیجی ضرور کھانی چاہیے۔ خاص طور پر وہ افراد جن کے خاندان میں کسی کوسرطان ہوچکا ہو۔
بینائی بڑھاتی ہے:
کلیجی میں چوں کہ حیاتین الف (وٹامن اے) کے ہوتی ہے، اس لیے ماہرچشم اسے ان افراد کوکھانے کامشورہ دیتے ہیں، جوآنکھوں کے تعدیے (انفیکشن) میں مبتلا ہوتے ہیں یاجنھیں رتوندھا (Night Blindness) ہوتاہے۔ سے پابندی سے کھانے سے دور اور نزدیک کی نگاہ بہترہو جاتی ہے۔ کلیجی کوکم مقدار میں کھانا چاہیے، اس لیے اس کے جزوتانبے کی بناپر اس میں زہریلے اثرات بھی ہوتے ہیں۔

(1) ووٹ وصول ہوئے