وزیراعظم عمران خان کی آنحضورؐ کی حیات طیبہ اور اسوہٴ حسنہ پر حقیقی تحقیق اور ان کی سیرت کو مؤثر انداز میں اجاگر کرنے کیلئے ملک کی تین بڑی جامعات میں سیرت چیئر کے قیام کیلئے پلان مرتب کرنے کی ہدایت

سیرت چیئر کے قیام کا مقصد آنحضورؐ کی حیات طیبہ اور اسوہٴ حسنہ پر جینوئن ریسرچ اور ان کی سیرت کو اجاگر کرنا ہے، آنحضورؐ کی ہمہ گیر اور جامع الصفات ذات مبارکہ پر جینوئن تحقیق پر مبنی علم سے نہ صرف انفرادی زندگیوں میں رہنمائی حاصل ہو گی بلکہ اسلام کے خلاف منفی پروپیگنڈے کا مقابلہ کرنے میں بھی مدد ملے گی، وزیراعظم عمران کی چیئرمین ایچ ای سی طارق بنوری سے گفتگو

جمعرات نومبر 20:42

وزیراعظم عمران خان کی آنحضورؐ کی حیات طیبہ اور اسوہٴ حسنہ پر حقیقی ..
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 نومبر2018ء) وزیراعظم عمران خان نے آنحضورؐ کی حیات طیبہ اور اسوہٴ حسنہ پر حقیقی تحقیق اور ان کی سیرت کو مؤثر انداز میں اجاگر کرنے کیلئے چیئرمین ایچ ای سی کو ملک کی تین بڑی یونیورسٹیوں میں سیرت چیئر کے قیام کیلئے پلان مرتب کرنے کی ہدایت کی ہے۔ انہوں نے یہ ہدایت چیئرمین ہائر ایجوکیشن کمیشن طارق بنوری کو جمعرات کے روز وزیراعظم آفس میں ملاقات کے دوران دی۔

وزیراعظم نے کہا کہ سیرت چیئر کے قیام کا مقصد آنحضورؐ کی حیات طیبہ اور اسوہٴ حسنہ پر جینوئن ریسرچ اور ان کی سیرت کو اجاگر کرنا ہے تاکہ نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا بھر میں بسنے والے مسلمان اس تحقیق اور علم کے خزانے سے استفادہ کر سکیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ آنحضورؐ کی ہمہ گیر اور جامع الصفات ذات مبارکہ پر جینوئن تحقیق پر مبنی علم سے نہ صرف انفرادی زندگیوں میں رہنمائی حاصل ہو گی بلکہ اسلام کے خلاف منفی پروپیگنڈے کا مقابلہ کرنے میں بھی مدد ملے گی۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ آنحضورؐ سے محبت ہر مسلمان کے ایمان کا حصہ ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ اس سال عید میلادالنبیؐ کے موقع پر ’’رحمتہ اللعالمین کانفرنس‘‘ کا انعقاد کیا جا رہا ہے جس کا مقصدر سرور کائنات کی سیرت مبارکہ کو اجاگر کرنا ہے۔ چیئرمین ایچ ای سی نے وزیراعظم کو وزیراعظم ہاؤس میں یونیورسٹی کے قیام کے منصوبہ پر اب تک کی پیشرفت سے بھی آگاہ کیا۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments