عمران خان کو اگر کوئی ٹھیک پہچان سکا تو وہ جنرل اشفاق پرویز کیانی ہیں

جنرل کیانی نہ تو عمران خان کی نفرت میں مبتلا ہوئے اور نہ محبت میں،نہ مسترد کیا نہ قبول بس لا تعلق ہو گئے،ایک دن انہوں نے عمران خان سے متعلق کیا سوال کیا؟ سینئیر صحافی ہارون الرشید کا کالم میں اہم انکشاف

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان اتوار اگست 13:09

عمران خان کو اگر کوئی ٹھیک پہچان سکا تو وہ جنرل اشفاق پرویز کیانی ہیں
اسلام آباد (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔25 اگست 2019ء) معروف صحافی ہارون رشید اور وزیراعظم عمران خان کے درمیان قربت سے ہر کوئی واقف ہے۔ہارون رشید خود اس بات کا اعتراف کرتے رہے کہ وہ عمران خان کو پسند کرتے تھے اور تبدیلی کے سفر میں ان کے ساتھ رہے۔تاہم عمران خان کے وزیراعظم منتخب ہوتے ہی عمران خان کے کچھ قریبی افراد ایسے بھی تھے جو یہ سمجھتے تھے کہ عمران خان اس ساے ماحول میں کامیاب نہ ہو سکیں گے اور ان ہی میں ایک عمران خان کے سیاسی استاد سمجھے جانے والے ہارون الرشید تھے۔

اس حوالے سے ہارون الرشید اپنے کالم میں لکھا تھا کہ عمران خان اپنی خوبی اور کمالات کے باعث نہیں جیتے ،کسی خوش فہمی میں بھی نہ رہیں مجھے ان سے کسی بڑے کارنامے کی امید نہیں ہے۔ انکا یہ بھی لکھنا تھا کہ اس مایوس کن حالات میں بھی مجھے عمران خان سے کچھ امیدیں ہیں اور وہ یہ کہ وہ پاکستان کی پولیس کو ضرور ٹھیک کردے گا۔

(جاری ہے)

سکولوں ،اسپتالوں اور سول سروس کے حوالے سے بھی میں بہت پر امید ہوں لیکن میں عمران خان سے کسی بڑے کارنامے کی امید نہیں رکھتا۔

معروف صحافی اور کالم نگار ہارون رشید نے اپنے حالیہ کالم "سفر ہے شرط " میں لکھا ہے کہ لطیفہ یہ ہے کہ سب سے بڑی غلطی کے ارتکاب میں اس ناچیز کا دخل تھا۔ برسوں سے میں ہی انہیں قائل کرتا رہا کہ ڈاکوؤں اور لٹیروں سے نجات کے لئے کپتان کی مدد کرنی چاہیے۔ وہ تامل کا شکار تھے۔ مہم جو کی سوجھ بوجھ پر انہیں اعتماد نہ تھا۔ایک دن بہت سنجیدگی کے ساتھ سوال کیا کہ کہ کیا وہ اتنا ہی بہادر ہے جتنا کے دکھائی دیتا ہے؟ اپنے دلائل میں نے پیش کر دیے۔

بعد میں ثابت ہوا کہ بے شک وہ دلیر آدمی ہے مگر اتنا بھی نہیں ،اقتدار کے لئے خودداری طاق میں رکھ دی۔ہارون الر شید مزید کہتے ہیں کہ عمران خان کو اگر کوئی ٹھیک ٹھاک پہچان سکا تو وہ جنرل اشفاق پرویز کیانی ہے وہ نہ تو عمران خان کی نفرت میں مبتلا ہوئے اور نہ ہی محبت میں انہوں نے اسے مسترد کیا اور نہ ہی قبول، بس ان سے لاتعلق ہوگئے۔اس کے باوجود کے برسوں عمران خان ان کے بارے میں بے تکی باتیں کرتا رہا،اعلی ظرف جنرل نے آنکھ اٹھا کر بھی نہ دیکھا اور اپنے فرائض میں مگن رہے۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments